سوہاوہاہم خبریں

تحصیل ہیڈ کوارٹر ہسپتال سوہاوہ ایک بار پھر محرومی کی دلدل میں

سوہاوہ: محکمہ صحت میں عرصہ دراز سے تعینات افسران کے دعوے دھرے کے دھرے رہ گئے۔ ضلع جہلم کا محکمہ صحت پنجاب حکومت کو ماموں بنانے لگا، تحصیل ہیڈ کوارٹر ہسپتال ایک بار پھر محرومی کی دلدل میں۔
تفصیلات کے مطابق پنجاب حکومت کی ہدایت کے مطابق ڈپٹی کمشنر جہلم کو کھلی کچہریاں لگانے کے حکم پر پابندی سے عمل تو کیا جا رہا ہے لیکن سرکاری اداروں میں عام عوام کے مسائل جوں کے توں ہیں۔
محکمہ صحت جہلم میں پچھلے دس سال سے زائد عرصہ سے سیٹ پر قابص آفیسر کی بے حسی لاپرواہی اور فرائض میں غفلت کا اندازہ اس بات سے لگایا جا سکتا ہے کہ تحصیل ہیڈ کوارٹر ہسپتال سوہاوہ میں ایک سال سے انتھیسیا اسپیشلسٹ کی سیٹ پر کنٹریکٹ پر تعینات ڈاکٹر کا کنٹریکٹ 15 جنوری کو ختم ہو گیا جس کے بعد دو دن کے لیے سرجن کی تعیناتی بھی جہاں بے سود ہو گئی ہے وہی پر ہر ماہ ہونے والے درجنوں سی سیکشن جیسے آپریشن سے بھی شہری محروم ہو جائیں گے۔
تحصیل ہیڈ کوارٹر ہسپتال میں سی سیکشن کی سہولت ہونے کی وجہ سے بروقت آپریشن سے جہاں کئی قیمتی جانیں محفوظ ہوئی ہیں وہی غریب مریضوں کو مفت علاج کی سہولت میسر ہوئی ہے۔
انتھیسیا اسپیشلسٹ کی سیٹ خالی ہونے پر شہریوں کا کہنا ہے کہ ڈپٹی کمشنر جہلم کی جتنی توجہ گرین اینڈ کلین مہم پر ہے اس کا کچھ حصہ اگر وہ سرکاری اداروں بالخصوص محکمہ صحت پر دیں تو صرف زبانی جمع تفریق کے بجائے ہسپتالوں کی کارکردگی عملی طور پر بہتر ہو سکتی ہے۔
سی او ہیلتھ جہلم اگر کنٹریکٹ کی مدت ختم ہونے کا علم نہیں رکھتے تھے یا علم رکھنے کے باوجود انہوں نے کنٹریکٹ کی مزید وسعت یا نئے انتھسیا اسپیشلسٹ کی تعیناتی عمل میں نہ لائی ہے تو یہ حکومت پنجاب کی طرف سے شہریوں کو سہولیات کی فراہمی کی پالیسی کے بھی سخت خلاف ہے۔
تحصیل ہیڈ کوارٹر ہسپتال سوہاوہ میں نئی بلڈنگ بنا تو گئی لیکن جس طرح ایمرجنسی کے لیے جانے والے مریضوں کے لیے جو سلوپ بنایا گیا ہے وہ زخمی مریضوں کے لیے کسی اذیت سے کم نہیں۔
عوامی حلقوں نے ایم پی اے راجہ یاور کمال، کمشنر راولپنڈی اور وزیر اعلی پنجاب سے مطالبہ کیا ہے کہ تحصیل ہیڈ کوارٹر ہسپتال سوہاوہ میں آپریشن جیسی بنیادی سہولت سے شہریوں کو محروم کر دیا گیا ہے جس کے بعد ہسپتال میں سر درد اور بخار جیسے مریضوں کا ہی علاج ممکن رہا ہے کیونکہ کسی بھی سپیشلسٹ ڈاکٹرز کی عدم تعیناتی اور اس جدید دور میں بھی جدید علاج کی سہولیات سے محرومی محکمہ صحت کی فرائض سے غفلت اور لاپرواہی کا منہ بولتا ثبوت ہے۔
عوامی حلقوں نے انتھیسیا اسپیشلسٹ سمیت مستقل سرجن اور اسپیشلسٹ سیٹوں کی ڈاکٹرز کی تعیناتی کا مطالبہ کیا ہے۔

متعلقہ مضامین

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button