پنڈدادنخان میں پولیس گردی، دھریالہ جالپ پولیس چوکی کے انچارج کا اہلکاروں سمیت شہری پر تشدد

میڈیکل میں تشدد ثابت ہونے پر پولیس اہلکاروں کے خلاف مقدمہ درج کر لیا گیا

0

پنڈدادنخان: نئے پاکستا ن میں بھی تھانہ کلچر نہ بدل سکا، پنڈدادنخان میں پولیس گردی کا واقعہ، پولیس اہلکار شہری کوبغیر مقدمہ کے کئی گھنٹے چوکی میں رکھ کر تشدد کرتے رہے، تھانہ پنڈدادنخان کی چوکی دھریالہ جالپ کے چوکی انچارج سمیت پولیس اہلکاروں کا شہری پر تشدد ،میڈیکل میں تشدد ثابت ہونے پر پولیس اہلکاروں کے خلاف مقدمہ درج کر لیا گیا۔

تفصیلات کے مطابق تھانہ پنڈدادنخان چوکی دھریالہ جالپ میں پولیس گردی کا واقعہ پیش آیا، چوکی انچارج سب انسپکٹر محمد افضل نے ساتھی اہلکاروں کے ہمراہ تاجر ذیشان کو پہلے بغیر کسی مقدمہ کے چوکی میں رکھا اور تشدد کیا اور مبینہ طور پر اذیت دینے کے لیے جانور کی چال چلنے پر مجبور کرتے رہے اور تشدد کرکے مجبور کرتے رہے کہ مدعی سے معافی مانگو۔

جب ذیشان کو علاقہ مجسٹریٹ کے سامنے 151/107کی کاروائی کے لیے پیش کیا گیا تو ذیشان مظفر نے اپنا میڈیکل کرانے کی درخواست دائر کی جس پر میڈیکل رپورٹ میں تشدد ثابت ہوا علاقہ مجسٹریٹ نے 156کی کاروائی کا حکم دیتے ہوئے تھانہ پنڈدادنخان پولیس چوکی دھریالہ جالپ کے سب انسپکٹر سمیت دو اہلکاروں کے خلاف دفعات 156-337کے تحت مقدمہ درج کرنے کے احکامات جاری کئے جس پر تھانہ پنڈدادنخان میں پولیس اہلکاروں کے خلاف مقدمہ درج ہو گیا۔

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.