جہلماہم خبریں

جہلم میں ٹیوشن سینٹر کے استاد کی کمسن بچیوں پر تشدد کرنے کی ویڈیو وائرل، پولیس نے ٹیچر کو گرفتار کرلیا

جہلم میں ٹیوشن سینٹر کے استاد کے کمسن بچیوں پر تشدد کرنے کی ویڈیو وائرل ہونے پر وفاقی وزیر فیصل واوڈا کے نوٹس کے بعد جہلم پولیس نے استاد کو حراست میں لے لیا۔

میڈیا ذرائع پولیس کے مطابق جہلم شہر کے محلہ خانساماں میں ٹیوشن سینٹر میں استاد نے سبق یاد نہ کرنے پر کمسن بچیوں پر تشدد کیا جس کی ویڈیو سوشل میڈیا پر وائرل ہوگئی، ویڈیو کے وئرال ہوتے ہی جہلم پولیس نے ٹیچر کو حراست میں لے لیا تاہم بچیوں کے والد ذوالفقار احمد ولد مختار احمد سکنہ باغ محلہ جہلم نے ڈی ایس پی دفتر میں پہنچ کراستاد کو معاف کردیا۔

ڈی ایس پی ابراہیم وڑائچ نے بتایا کہ مدعی کے معاف کرنے کے باوجود پولیس نے مقدمہ درج کر کےاستاد ابوبکر ولد عبد الرحیم کو گرفتار کر لیا۔

دوسری طرف وائرل ہونے والی وڈیو میں دیکھا جاسکتا ہے کہ ٹیوشن ٹیچر کی طرف سے سبق یاد نہ کرنے پر کس طرح بے دردی کے ساتھ طالبات کو بالوں سے پکڑ کر کھینچا جا رہا ہے۔ ایک اور وڈیو میں استاد کی طرف سے ننھی بچی کو تشدد کا نشانہ بناتے ہوئے اس کو تھپڑ مارتے ہوئے دیکھا گیا، تشدد کی وجہ سے بچی گر پڑتی ہے لیکن ٹیچر کی طرف سے پھر بھی تشدد روکا نہیں گیا۔


وفاقی وزیر فیصل واوڈا نے سماجی رابطے کی ویب سائٹ ٹوئٹر پر ویڈیو شیئر کرتے ہوئے کہا تھا کہ ابھی ایک ویڈیودیکھی جس میں ٹیچربری طرح بچیوں کوماررہاہے، اس طرح بچوں کوبری طرح مارنے کارویہ ناقابل برداشت ہے۔

فیصل واوڈا کا کہنا تھا کہ ایسی سزائیں بچوں کے ذہنوں پرہمیشہ کیلئے اثرچھوڑجاتی ہیں، ڈی پی اوجہلم کوہدایات دی ہیں ٹیچرکوفوری گرفتارکیاجائے، ضرورت پڑی تو ٹیچر کیخلاف ایف آئی آر بھی درج کراؤں گا۔

بعد ازاں بچیوں پرتشددکرنیوالے ٹیچرکی گرفتاری پر فیصل واوڈا نے پیغام میں کہا تھا کہ ڈی پی او جہلم نے بروقت کاروائی کرتے ہوئے استاد کو گرفتار کیا، استاد کے خلاف ایف آئی آر درج کرکے جیل منتقل کر دیا گیا ہے۔

متعلقہ مضامین

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button