پنڈدادنخاناہم خبریں

گورنمنٹ گرلز ہائی سکول پنڈدادنخان تھانہ میں تبدیل، سکول ہیڈ کا ٹیچر پر مبینہ تشدد، ٹیچر بے ہوش

پنڈدادنخان: گورنمنٹ گرلز ہائی سکول پنڈدادنخان تھانہ میں تبدیل، سکول ہیڈ کا ٹیچر پر مبینہ تشدد ،ٹیچر بے ہوش، ہسپتال منتقل، سماجی حلقوں کا اظہار مذمت ۔

تفصیلات کے مطابق گورنمنٹ گرلز ہائی سکول پنڈدادنخان تھانہ کوتوالی میں تبدیل کر دیا گیا، پرنسپل نجمہ ملک نے کلاس روم میں جا کر (ع) نامی ٹیچر کو تشدد کا نشانہ بنایا جس پر ٹیچر کلاس روم میں ہی بے ہوش ہو گئی جس کو ریسکیو نے سول ہسپتال منتقل کیا۔

سماجی حلقوں نے سکول میں پیش آنے والے افسوس ناک واقعہ پرافسوس کا اظہار کرتے ہوئے اصلاح کا مطالبہ کیا۔

اس سلسلے میں ڈی سی جہلم راؤ پرویز اختر نے سی او ایجوکیشن معروف چوہدری جہلم کو انکوائری کر کے رپورٹ کرنے کے احکامات جاری کئے تھے اس سلسلے میں سی او ایجوکیشن نے ڈی او ولایت حسین شاہ کی قیادت میں انکوائری کمیٹی تشکیل دے دی ہے۔

عوامی و سماجی حلقوں کا کہنا ہے اگر کسی سکول کی پرنسپل تشدد پسند ہے تو اس سکول کی طلباء پر کیسے اثرات ہوں گے۔ یاد رہے پرنسپل نجمہ ملک پر اس سے پہلے کرپشن کا چارج لگا تھا اور وہ معطل بھی رہ چکی اور وہ خورد برد شدہ رقم دوبارہ قومی خزانے میں جمع کروا کر بحال ہوئی ہیں۔

عوامی و سماجی حلقوں کا کہنا اس سلسلے میں شفاف انکوائری کرکے سخت سے سخت کارروائی کی جائے۔

متعلقہ مضامین

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button