دینہ میں جعلی پولیس انسپکٹر بن کر لوگوں کو لوٹنے والا نوسر باز پولیس وردی میں گرفتار

0

دینہ: پولیس کی کاروائی ،جعلی پولیس افسر بن کر لوگوں کو لوٹنے والا نوسر باز وردی میں گرفتار ،ملزم کے قبضے سے جعلی پولیس کارڈ بھی برآمد، ملزم خود کو آئی جی آفس لاہور کا ملازم ظاہر کرتا تھا اور پولیس میں نوکری کا جھانسہ دے کر سادہ لوح عوام کو لوٹ رہا تھا ،پولیس نے 3روزہ ریمانڈ حاصل کر لیا ،ملزم سے مزید انکشافات کی توقع،کاروائی ڈی پی او جہلم کی ہدایت پر کی گئی ۔

تفصیلات کے مطابق گزشتہ روز نوید اختر ولد لال خان سکنہ ڈومیلی محلہ دینہ نے موقف اختیار کیا کہ بائی پاس روڈ پر میری ورکشاپ ہے جس پر وردی میں ملبوس ایک انسپکٹر آیا اور مجھ سے کہا کہ کار ٹھیک کروانی ہے باتوں باتوں میں پوچھا کہ آپ کہاں نوکری کرتے ہیںجس پر اس نے بتایا کہ میں میرا نا م محمد اشرف ہے اور میں آئی جی آفس لاہور میں ہوتا ہوں اگر کوئی کام ہے تو بتاؤ۔

متاثرہ شخص نے بتایا کہ میں نے اسے بتایا کہ میرا بیٹا محمد سعید بے روزگار ہے پولیس میں بھرتی کروانا چاہتا ہوں جس پر اس نے مجھ سے 25ہزار روپے طلب کیئے اور کہا کہ تمہارے بیٹے کو جہلم پولیس میں بھرتی کروا دے گا جس پر میں نے اسے 15ہزار روپے دیئے تو اس نے کہا کہ باقی رقم 10دن بعد ادا کر دینا اسکے جانے کے بعد میں نے اپنے طور پر پتا کروایا تو پتا چلا کہ اشرف نامی کوئی انسپکٹرنہ ہے۔

نوید اختر نے بتایا کہ گزشتہ روز جعلی پولیس انسپکٹرمحمد اشرف دوبارہ میری دوکان پر آیا اور بقیہ رقم کا مطالبہ کیا جس پر میں نے فوری پولیس کو اطلاع دی جس پر پولیس نے ڈی پی او جہلم سید حماد عابد کی ہدایت پر ایس ایچ او تھانہ دینہ ملک آصف نواز اور انچارج پولیس سٹی چوکی دینہ نے کارروائی کرتے ہوئے ملزم کو جعلی وردی سمیت گرفتار کر لیا ،ملزم سے جعلی پولیس کارڈ بھی برآمد ہوئے۔

بتایا جاتا ہے کہ ملزم لاہور پولیس کا ڈس مس کانسٹیبل تھا اور لوگوں کو نوکری کا جھانسہ دے کر لوٹ رہا تھا ،پولیس تھانہ دینہ نے ملزم محمد اشرف ولد محمد اسلم ساکن گرین ٹاؤن لاہور کے خلا ف مقدمہ درج کر لیا اور ملزم کا تین روزہ ریمانڈ حاصل کر کے تفتیش شروع کر دی ۔

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.