جہلماہم خبریں

سول ہسپتال جہلم کا نرسنگ ہاسٹل نجی جیل بنا دیا گیا، امتحانی پرچہ چوری کے الزام میں درجنوں طالبات قید

جہلم (عامر کیانی+چوہدری عابد محمود) سول ہسپتال جہلم نرسنگ سکول کی انچارج کا ظلم ، امتحانی پرچہ چوری کرنے کا الزام لگا کر درجنوں طالبات کو قید کر دیا ، معصوم طالبات کی چیخ و پکار، آدھی رات کو انکوائری کے لیے بلا لیا۔

نرسنگ سکول و ہاسٹل میں عرصہ دراز سے انچارج اور اساتذہ طالبات کو تشدد ، گالیوں کا نشانہ بنانے کا معمول بنائے ہوئے ہیں، طالبات سے گھر یلو کام کاج کروانا بھی معمول ، میڈیا کی نشاندہی پر بھی ضلعی انتظامیہ نہ کوئی ایکشن نہ لیا،درجنوں طالبات ذہنی تناؤ کا شکار، صوبائی وزیر صحت ڈاکٹر یاسمین راشد سے نوٹس لینے کا مطالبہ۔

تفصیلات کے مطابق جنرل نرسنگ اینڈ مڈوائفری سکول جہلم کی طالبات کے والدین نے میڈیا نمائندوں سے گفتگو کرتے ہوئے بتایا کہ سکول انتظامیہ نے الزام عائد کیا ہے کہ طالبات نے الماری کے تالے توڑ کر پرچے چوری کئے ہیں جس پر نرسنگ سکول کی پرنسپل میڈم گلیڈس نے سال چہارم کی طالبات کو پورا دن یرغمال بنائے رکھا۔

زیر تعلیم طالبات کے والدین نے الزام عائد کیاکہ سکول انتظامیہ نے صبح سے رات گئے تک طالبات کو کھانا تک فراہم نہیں کیا ، نرسنگ اینڈ مڈوائفری سکول جیل کا روپ دھار چکا ہے طالبات سے پرنسپل اپنی رہائش گاہ پر گھر کے کام کاج کرواتی ہے طالبات سے کپڑوں سمیت برتن تک دھلوائے جاتے ہیں ۔

یہ خبر بھی پڑھیں: سول ہسپتال نرسنگ سکول طالبات کیلئے جیل بن گیا، طالبات کو شدید ذہنی کا نشانہ بنا نا معمول بن گیا

طالبات کے والدین کا کہنا تھا کہ نرسنگ اینڈ مڈوائفری سکول میں جنگل کا قانون نافذ ہے رات گئے ہمیں اطلاع ملی ہے کہ طالبات کی انکوائری کروائی جارہی ہے جب ہم لوگ سکول پہنچے تو معلوم ہواکہ صبح سے ہماری طالبات کو ایک کمرے میں بند کئے ہوئے ہیں ہماری بچیاں ذہنی تناؤ کا شکار ہو چکی ہیں

واقعہ کی اطلاع ملتے ہی پرنٹ و الیکٹرانک میڈیا کے نمائندے بھی حرکت میں آئے میڈیا کی اطلاع ملتے ہی سکول انتظامیہ نے تمام طالبات کو خاموش رہنے کی ہدایت کی۔

ادھر نرسنگ طالبات کے مطابق ان کو پانی تک پینے نہیں دیا گیا، میڈم گلیڈس نے ہمیں آدھی رات کو بلوایا اور کہا کہ آپ کی انکوائری کرنے لاہور سے محکمہ ہیلتھ کی ٹیم آرہی ہے تا کہ پتہ چل سکے کہ پرچہ کس نے چوری کیا ہے۔

اس خبر کو بھی پڑھیں: جہلم میں سول ہسپتال کی نرسنگ طالبات نے چھ ماہ سے ماہانہ وظائف نہ ملنے پر احتجاجی مظاہرہ

طالبات نے میڈم پر الزام عائد کیا کہ سکول پرنسپل کی بلیک میلنگ کی وجہ سے چند دن پہلے دو طالبات نے گولیاں کھا کر خودکشی کرنے کی کوشش کی لیکن معاملے کو دبا دیا گیا، سکول پرنسپل میڈم گلیڈس انتہائی سنگدل عورت ہے پیسوں کے لیے طالبات کو مجبور کرتی ہے جو پیسے نہ دے ان کو تشدد کا نشانہ بناتی ہے۔

سکول پرنسپل میڈم گلیڈس نے موقف دیتے ہوئے بتایا کہ ڈائریکٹر جنرل نرسنگ نے حکم دیاہے کہ تمام طالبات کو ایک جگہ اکٹھا کیا جائے جس پر عملدرآمد کرتے ہوئے طالبات کو بلوایا ہے ، سی سی ٹی وی کیمروں کی بابت انہوں نے کہا کہ چند ماہ قبل تیز آندھی چلنے سے کیمروں کی تاریں ٹوٹ گئیں تھیں جس کی وجہ سے کیمرے کام نہیں کر رہے اور ہمارے پاس اتنا بجٹ نہیں کے کیمروں کو دوبارہ بحال کروایا جا سکے۔

متعلقہ مضامین

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button