جہلماہم خبریں

جہلم میں دلہن شادی کی رات ہی نقدی اور زیورات لے کر فرار

جہلم: دل کے ارمان آنسوؤں میں بہہ گئے، صوابی سے جہلم لائی گئی نئی نویلی دلہن دولہے کو بہوش کرکے گھر سے زیورات نقدی اور قیمتی سامان لوٹ کر بھاگ گئی، دولہے اور اہل خانہ پر غشی کے دورے، ولیمے کے انتظامات دھرے کے دھرے رہ گئے، دولہا لقمان گونگا بہرہ ہے جس کے لواحقین نے ایجنٹ کے ذریعے چار لاکھ روپے ودیگر رقم ادا کر نکاح کیا تھا۔

تفصیلات کے مطابق جہلم کے گاؤں عید گاہ کے رہائشی گونگے بہرے محمد لقمان کی شادی گزشتہ روز صوابی مردان کی رہائشی نازیہ نامی عورت کے ساتھ ہوئی تھی۔ دولہے کے خاندان نے بڑے ارمانوں کے ساتھ دلہن بیاہ کر لائے اور بھرپور خوشیاں بنائی گئی لیکن انہیں یہ معلوم نہیں تھا کہ یہ خوشی عارضی ہے۔

رات کو دولہا دلہن اپنے کمرے میں سوئے صبح نہ اٹھنے پر جب دولہے کی والدہ کمرے میں گئی تو دولہا لقمان بہوش پڑا تھا اور دلہن غائب تھی، دیکھنے پر علم ہوا کہ دلہن زیورات، نقدی، قیمتی اشیاء اور کپڑے اٹھا کر فرار ہو گئی ہے۔ لٹنے کے بعد گھر والوں پر غشی کے دورے پڑنا شروع ہوگئے۔

دلہن کے ساتھ ایک مرد بھی آیا تھا جس کا اس نے بتایا تھا کہ بھائی ہے، دولہے لقمان کے لواحقین کی طرف سے رشتہ داروں کیلئے ولیمے کے انتظامات دھرے کے دھرے رہ گئے اور میرج ہال والوں نے تیار شدہ سامان دولہے کے گھر پہنچا دیا۔

دولہے کی والدہ اور کزن رمیض کے مطابق گاؤں کے رہائشی پٹھان میاں بیوی نے ایک رشتے کروانے والے کے ذریعے یہ رشتہ کروایا تھا، چار لاکھ روپے دلہن کے والدین کو صوابی میں نقد دیئے گئے ہیں جبکہ دلہن کے جوتوں کپڑوں کے بھی دو لاکھ روپے ادا کیے ہیں۔

دلہن جو زیورات نقدی قیمتی اشیاء لوٹ کر گئی ہے اس کی قیمت بھی پانچ لاکھ روپے سے زائد بنتی ہے۔ اطلاع ملنے پر تھانہ صدر پولیس نے درخواست وصول کرکے ملزمان کی تلاش شروع کر دی ہے۔

متعلقہ مضامین

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button