جہلم

سابق ڈپٹی کمشنر جہلم کاانوکھا ریلیف، قیمتیں کم کرنے کی بجائے اضافہ کر دیا

جہلم: سابق ڈپٹی کمشنر جہلم کاانوکھا ریلیف، قیمتیں کم کرنے کی بجائے اضافہ کر دیا، شہری مہنگی اشیاء خوردونوش خریدنے پر مجبور۔

تفصیلات کے مطابق سابق ڈپٹی کمشنر جہلم اقبال حسین خان نے گزشتہ ماہ ڈسٹرکٹ پرائس کنٹرول کمیٹی کے اجلاس میں اشیائے خوردو نوش کی قیمتوں میں کمی کرنے کی بجائے کئی گنا مزید اضافہ کر دیا اور شہریوں میں تاثر دیا گیا کہ اشیاء خوردونوش کی قیمتوں میں کمی کی گئی ہے ۔

ڈپٹی کمشنر کے جاری کردہ نوٹیفکیشن کے مطابق بکرے کا گوشت 650 روپے فی کلو کے حساب سے فروخت کیا جائیگا، جبکہ گائے کا گوشت 300 روپے فی کلو کے حساب سے ضلع بھر میں فروخت کیا جائیگا۔

قابل ذکر بات یہ ہے کہ پڑوسی ضلع منڈی بہاؤ الدین میں بکرے کا گوشت 550 روپے فی کلو کے حساب سے فروخت ہو رہاہے جبکہ ضلع چکوا ل میں بھی بکرے کا گوشت 550 روپے فی کلو گرام کے حساب سے فروخت کیا جارہاہے۔ ڈپٹی کمشنر جہلم نے شہریوں کو ریلیف دینے کی بجائے کئی گنا اضافی نرخ مقرر کرکے گراں فروشوں کی سرپرستی شروع کر رکھی جسکی وجہ سے غریب اور سفید پوش طبقہ سے تعلق رکھنے والے شہری مہنگی اشیاء خوردونوش خریدنے پر مجبورہو چکے ہیں۔

جہلم شہر کی سماجی ، رفاعی ، فلاحی تنظیموں کے عمائدین نے ڈپٹی کمشنر جہلم کیپٹن (ر) عبدالستار عیسانی سے مطالبہ کیاہے کہ پڑوسی اضلاع میں مقررہ ہونے والے نرخوں کے برابر جہلم میں بھی گوشت کے نرخ مقرر کئے جائیں تاکہ شہری اپنے اہل و عیال کو بھی ارزاں نرخوں پر گوشت استعمال کر سکیں۔

متعلقہ مضامین

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button