جہلم

جہلم میں مسلسل چوریاں اور ڈکیتیاں جاری، 3 دوکانوں میں چوری کے بعد کار چوری

جہلم: مشین محلہ میں مسلسل چوریاں ، ڈکیتیاں جاری، تین دوکانوں کے بعد کار چوری، وارداتوں کے تانے بانے علاقہ میں بغیر شناخت مقیم افغانیوں سے ملنے لگے، پولیس کی غفلت کے باعث چیکنگ نہ ہوسکی۔
تفصیلات کے مطابق جہلم شہر میں کئی روز سے مسلسل چوریاں ڈکیتیاں جاری ہیں اور پولیس حسب معمول کاغذی کارروائیوں میں مصروف ہے، مشین محلہ میں ایک ہی رات تین دوکانوں کو لوٹنے کے بعد گزشتہ روز ایک قیمتی کار بھی چوری کر لی گئی۔
اس حوالے سے ذرائع سے معلوم ہو اہے کہ مشین محلہ نمبر 3میں کرائے کے مکانوں ، فلیٹوں میں رہنے والے اکثر افغانیوں کا کوئی بائیوڈیٹا پولیس کے پاس نہیں وہ چند روز کرائے کے مکان میں رہ کر ریکی کرتے ہیں اور واردات کرکے بآسانی نکل جاتے ہیں۔
ریلوے روڈ پر واقع دو پرانے ہوٹلوں میں سینکڑوں کی تعداد میں مسافروں کے روپ میں افغانی پٹھان رہتے ہیں جن کا بظاہر کوئی کاروبار نہیں اس کے باوجودوہ لاکھوں روپے کی گاڑیوں میں گھومتے پھرتے ہیں لیکن پولیس ان کی چیکنگ کرنے کی زحمت نہیں کرتی۔
ان پٹھانوں کے ساتھ بھیک مانگنے کیلئے آنے والی عورتیں بھی جرائم کی بنیادی وجہ ہیں جو بازاروں ، گھروں اور ہسپتالوں میں بھیک مانگنے کے بہانے وارداتیں کرتی ہیں جبکہ پولیس ہر واردات کے بعد فنگر پرنٹ اور دیگر ثبوت چیک کرنے میں ہی وقت ضائع کردیتی ہے۔
شہریوں کا کہنا ہے کہ اگر مشین محلہ نمبر 3، اسلام پورہ ، ریلوے روڈ پر موجو د ہوٹلوں کی چیکنگ کی جائے تو نوے فیصد جرائم پیشہ افراد گرفتار ہو سکتے ہیں ۔

متعلقہ مضامین

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button