جہلماہم خبریں

دینہ پولیس کی وساطت سے ادارہ ’’اپنا گھر‘‘ جہلم پہنچنے والی دس سالہ بچی کے والدین کا پتہ چل گیا

جہلم: دینہ پولیس کی وساطت سے ادارہ ’’ اپنا گھر‘‘جہلم پہنچنے والی دس سالہ بچی کے والدین کا پتہ چل گیا،گوجر خان کے رہائشی شیر گل اور اس کی بیوی کو سوشل میڈیا کی مدد سے پتہ چلا کہ ان کی بیٹی علینہ جہلم کے ادارہ میں ہے۔

تفصیلات کے مطابق چند روز قبل گوجر خان شہر کے رہائشی شیر گل کی بیٹی علینہ اپنے رشتہ داروں کو ملنے دینہ آئی اور چیز لینے کے لیے رشتہ داروں کے گھر سے نکلی تو واپسی کا راستہ بھول گئی اس صورتحال سے وہ اس حد تک گھبرا گئی کہ وہ اپنا پتہ راولپنڈی کا بتاتی تھی کیونکہ انہیں راولپنڈی سے گوجرخان رہائش اختیار کیے ابھی تھوڑ ا عرصہ ہوا تھا،لہٰذا علینہ جب دینہ پولیس چوکی پہنچی تو انچارج سٹی پولیس چوکی دینہ نے علینہ کو جہلم جناح کالونی میں بے سہارا افراد کے لیے اپنا گھر کے نام سے منسوب ادارہ میں بجھواد یا۔

ادارہ کی انتظامیہ اور دینہ و جہلم کے میڈیا نے سوشل میڈیا پر بھر پور مہم چلائی کہ اس کے والدین کا سراغ مل سکے،جس کے نتیجہ میں سوشل میڈیا پرخبر دیکھ کر آخر کار علینہ کے والدین نے اچانک ادارہ اپنا گھر میں رابطہ کیا جب والدین نے 12روز بعد اپنی گمشدہ بیٹی کو ملے تو ان کی خوشی کی انتہا نہ تھی ، والدین بار بار ادارہ کی انتظامیہ کا شکریہ ادا کررہے تھے۔

ادارہ کی چیئرپرسن آسیہ ممتاز نے علینہ اور اس کے والدین کو اپنے ساتھ لیا اور دینہ پولیس چوکی میں ہی بچی کو اس کے والد اور والدہ کے حوالے کیا۔بچی کے والدین نے پولیس سٹی چوکی دینہ اور ادارہ اپنا گھر کی انتظامیہ کا شکریہ ادا کیا جنہوں نے ان کی بیٹی کو بحفاظت اپنے پاس رکھا اس کی دیکھ بھال کی ۔

اس موقع پر چیئرپرسن اپنا گھر آسیہ ممتاز نے کہا کہ اللہ کا شکر ہے کہ علینہ کے والدین کا پتہ چل گیا اس تمام ترصورتحال میں میں دینہ سٹی پولیس چوکی کے انچارج اور دیگر ملازمین کا کردار انتہائی ذمہ دارانہ رہا جنہوں نے بچی کو بحفاظت ادارہ اپنا گھر تک پہنچایا یہی وجہ ہے کہ آج وہ میڈیا اور ادارہ اپنا گھر کی انتظامیہ کی وجہ سے اپنے والدین تک پہنچ سکی۔

متعلقہ مضامین

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔

Back to top button