جہلماہم خبریں

کالعدم جماعت کا مارچ؛ جہلم کا کئی شہروں سے زمینی راستہ بدستور منقطع، شہریوں کو مشکلات کا سامنا

کالعدم تنظیم کے مارچ کے باعث جہلم سمیت کئی شہروں کا آپس میں زمینی رابطہ کئی روز سے منقطع ہے، جہلم پل مکمل سیل، شہریوں نے کشتیوں کا سہارہ لینا شروع کردیا، انٹرنیٹ سروس بند، شہریوں کو مشکلات کا سامنا، پٹرول نایاب ہو گیا۔

میڈیا رپورٹس کے مطابق کالعدم تنظیم کے لاہور سے اسلام آباد جانے والے مارچ کے شرکاء اس وقت وزیر آباد میں موجود ہیں، مارچ کے شرکاء کو روکنے کے لیے دریائے جہلم اور چناب کے پل پر رکاوٹیں کھڑی اور اطراف میں خندقیں کھودی گئی ہیں جبکہ جہلم پل کو مکمل طور پر سیل کر دیا گیا ہے۔ اس کے علاوہ جہلم سے دیگر شہروں کو جانے والے راستے بھی بند ہیں۔ جہلم کا لاہور سے براستہ جی ٹی روڈ زمینی رابطہ گزشتہ کئی دن سے معطل ہے۔

ضلع جہلم میں کیے گئے حفاظتی انتظامات نے شہریوں کا جینا محال کردیا ہے، جہلم پل مسلسل چار روز سے بند ہے، انتظامیہ نے جگہ جگہ کنٹینرز کھڑے کرکے سڑک ٹریفک کے لئے بند کررکھی ہے، ملحقہ علاقوں میں بسنے والوں کو شدید پریشانی کا سامنا ہے۔ غلہ منڈی، سبزی منڈی اور فروٹ منڈی میں اشیاء خوردونوش کی سپلائی معطل ہے۔

حکومت نے مارچ کو کسی بھی صورت جہلم سے آگے نہ بڑھنے دینے کا عندیہ دے رکھا ہے۔ نیشنل ہائی وے، جی ٹی روڈ، چناب ٹول پلازہ سے چکوال موڑ بھائی خان سوہاوہ تک چھ مقامات سے ٹریفک کے لیے بند ہے۔ جہلم ٹول پلازہ، جہلم کینٹ، پاکستان ٹوبیکو کمپنی کے مقامات، چکوال موڑ، بھائی خان پل سوہاوہ کے مقامات ٹریفک کے لئے بند ہیں۔

جہلم اور دینہ میں 4روز سے انٹرنیٹ سروس بھی معطل ہے جس سے شہریوں کو شدید مشکلات کا سامنا ہے۔ آمدورفت معطل ہونے کے باعث اشیائے خوردونوش،پھلوں اور سبزیوں کی قیمتیں آسمان سے باتیں کرنے لگیں جبکہ پٹرول بھی نایاب ہونے لگا ہے۔

سڑکوں کی بندش کی وجہ سے شہریوں نے کشتیوں کا سہارہ لینا شروع کردیا، ایک ضلع سے دوسرے ضلع جانے کے لیے لوگ جان ہتھیلی پر رکھ کر کشتی پر سفر کرنے پر مجبور ہیں۔

متعلقہ مضامین

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔

Back to top button