گرلز ایلیمنٹری سکول قاضی حسینی میں ہیڈ مسٹریس تعینات نہ ہو سکی، بچیوں کا مستقبل داؤ پر

0

دینہ: گورنمنٹ گرلز ایلیمنٹری سکول قاضی حسینی یونین کونسل گڑھ محل میں آج تک ہیڈ مسٹریس تعینات نہ ہو سکی ، سکول کا اسٹاف بھی عوام نے اپنی مدد آپ کے تحت انتظام کیا ہوا ہے ،محکمہ تعلیم حکومت پنجاب کی عدم توجہی کی وجہ سے بچیوں کا مستقبل داؤ پر لگ گیا۔

تفصیلات کے مطابق یونین کونسل گڑھ محل کا گورنمنٹ ایلمنٹری سکول قاضی حسینی میں آج تک ہیڈ مسٹریس کو تعینات نہ کیا جا سکا ۔سکول میں سٹاف کی بھی کمی پائی جاتی ہے۔گورنمنٹ ایلیمنٹری سکول میں اسٹاف کی چار ممبرز کو 2007ء تنخواہیں اپنی مدد آپ کے تحت علاقے کے مخیر حضرات ادا کر رہے ہیں ۔

علاقے کی معروف سماجی شخصیت کرنل نذر حسین نے ایک کروڑ 20لاکھ روپے کی مدد بھی کی ہے، اس کے باوجود سکول میں اسٹاف کی کمی کا ہونا گورنمنٹ کے تعلیمی اداروں کے لیے لمحہ فکریہ ہے ۔ایک ایسے سکول جس کی عمارت پر 90لاکھ روپے کے اخراجات آئے ہوں اور وہاں پر ہیڈ مسٹریس ہی تعینات نہ ہو تو اس سکول کا نظام تعلیم کیسا ہو گا ۔گورنمنٹ گرلز ایلیمنٹری سکول قاضی حسینی میں ہیڈ مسٹریس اور اسٹاف کی کمی کی وجہ سے بچیوں کا مستقبل خطرے میں پڑ گیا ہے ۔

اہلیان علاقہ نے اعلی حکام سے مطالبہ کیا ہے کہ گورنمنٹ ایلیمنٹری سکول قاضی حسینی میں فوری طور پر ہیڈ مسٹریس کی تعیناتی کے ساتھ ساتھ اسٹاف کی کمی کو پورا کیا جائے تاکہ دیہی علاقے کی بچیاں جو کے مستقبل میں کچھ بننے کے خواب بنائے بیٹھی ہیں ان کی تعبیر عمل میں لائی جا سکے۔

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.