جہلم

جہلم شہرکے مضافاتی علاقے اپنے نام کی طرح شاداب نہ ہو سکے

جہلم: شہرکے مضافاتی علاقے اپنے نام کی طرح شاداب نہ ہو سکے، غلیظ پانی سڑکوں پر ، لٹکتی بجلی کی تاریں ، ٹوٹی پھوٹی گلیاں ،ناکارہ سڑکیں مکینوں کی زندگیاں اجیرن ہو گئیں۔ مکین شدیدذہنی و جسمانی کوفت میں مبتلا ، ڈپٹی کمشنر جہلم سے نوٹس لینے کا مطالبہ۔

اہلیانِ علاقہ نے صحافیوں سے گفتگو کرتے ہوئے بتایا کہ جہلم کے گنجان آباد علاقوں محلہ اسلام پورہ ، بلال ٹاؤن، مخدوم آباد کی سٹرکیں، گلیاں پچھلے کئی سالوں سے ٹوٹ پھوٹ کا شکار ہیں ، جس کیوجہ سے دونوں محلوں کے مکین ذہنی تنائو کا شکار ہو چکے ہیں ، گلیاں ، محلے صفائی ستھرائی نہ ہونے کے باعث بیماریوں کی آماجگاہ بن چکی ہیں ۔

گلیوں کی ٹوٹ پھوٹ کے باعث گھروں سے نکلنے والا گندا پانی گلیوں میں کھڑا ہو جاتا ہے جس کی وجہ سے مچھروں کی افزائش میں غیر معمولی اضافہ ہو چکاہے، یہ گندا پانی نہ صرف گلی محلوں میں پھیل رہا ہے بلکہ علاقہ مکینوں کے مکانوں کی بنیادوں میں دھنس کر گھروں کی دیواریں کمزور کرنے کا سبب بن رہا ہے۔

محلوں کی مسجدوں کے پاس بھی گندا پانی جمع رہتا ہے جس کی وجہ سے نمازیوں کو پانچ وقت نماز کی ادائیگی میں شدید دشواری کا سامنا کرنا پڑتا ہے۔ ان علاقوں کی متعدد گلیاں برائے نام پختہ ہیں، جس کی وجہ سے بارشوں کے موسم میں شہریوں کو آمدورفت میں شدید مشکلات کا سامنا کرنا پڑتا ہے۔

شہریوں نے منتخب نمائندوں کے علاوہ ضلعی انتظامیہ سے مطالبہ کیا ہے کہ ان علاقوں کی سڑکوں ، گلیوں کو پختہ کرنے کے لئے فنڈز جاری کئے جائیں تاکہ آج کے ترقی یافتہ دور میں علاقہ مکین بنیادی سہولیات سے مستفید ہو سکیں۔

متعلقہ مضامین

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button