جہلم

پنجاب ہیلتھ کیئر کمیشن کی کارروائیوں کے باوجود جہلم شہر میں جعلی میڈیکل سٹور قائم

جہلم: پنجاب ہیلتھ کیئر کمیشن کی کاروائیوں کے باوجود جہلم شہر میں جعلی میڈیکل سٹور قائم ، سٹور مالکان نے جعلی بی فارمیسی کے سرٹیفکیٹس پیسوں کے عوض حاصل کر کے مکروہ دھندہ جاری کر رکھا ہے ، بی فارمیسی کرنے والے بیرون ملک، عطائی افرادجعلی سرٹیفکیٹس پر ڈر گ انسپکٹر کو نذرانہ دے کر جانوں سے کھیلنے لگے۔

تفصیلات کے مطابق وزیر اعلی پنجاب کے حکم پر گزشتہ چند روز میں جہلم میں عطائی ڈاکٹروں کے خلاف کاروائی تو زوروں پر ہے لیکن جہلم میں خود ساختہ فارماسسٹس کے خلاف کوئی کاروائی عمل میں نہیں لائی جارہی ہے۔

اس حوالے سے جہلم اپڈیٹس تحقیقات کے دوران معلوم ہوا ہے کہ شہر کے اکثرعلاقوں خصوصا جادہ ، سول ہسپتال ، مشین محلہ روڈ ، روہتاس روڈ، سول لائن ، بلال ٹاون ، نیا محلہ ،محمدی چوک میں میڈیکل سٹور ناتجربہ کار اور نان کوالیفائیڈ لوگوں نے کھول رکھے ہیں جس کے پاس میڈیکل کا کوئی بھی سرٹیفکیٹ نہیں ہے۔ البتہ بے فارمیسی کرنے والے افراد سے سرٹیفکیٹ خرید کر میڈیکل سٹور ز پر لٹکائے ہوئے ہیں اور محکمہ ہیلتھ کی چیکنگ کے موقع پر سرٹیفکیٹ ہولڈر کا نام استعمال کرکے مبینہ طور پر ڈر گ انسپکٹر کو خرچہ پانی دے کر دھندہ جاری رکھا جاتا ہے۔

یہاں یہ بات قابل ذکر ہے کہ کئی ایک سٹور پر آویزاں بی فارمیسی کے سرٹیفکیٹ ہولڈر عرصہ دراز سے بیرون ملک ہیں لیکن ان کے نام پر میڈیکل سٹور چل رہے ہیں جہاں میٹرک پاس افراد اندازے سے دوائیاں فروخت کررہے ہیں ۔شہریوں نے پنجاب ہیلتھ کیئر کمیشن سے مطالبہ کیا ہے کہ ایسے میڈیکل سٹورز کے خلاف بھی سخت کارروائی کی جائے ۔

متعلقہ مضامین

ایک تبصرہ

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button