جہلم

ایس ایچ اوز کی واپسی نہ ہونے سے پولیس افسران میں بے چینی بڑھ رہی ہے۔ ڈاکٹر فضل الحق

جہلم: پاکستان تحریک انصاف کے ضلعی رہنما ڈاکٹر فضل الحق (فضلی) نے کہا ہے کہ الیکشن سے قبل پنجاب پولیس کے افسران کو ایک ضلع سے دوسرے ضلع میں تبادلوں سے نہ صرف ملکی خزانے پر بوجھ بڑھا بلکہ امن و امان کی صورتحال بھی خراب ہوئی ، پولیس انسپکٹروں کی گھروں سے دور تعیناتیوں سے انکی عدم دلچسپی میں بھی غیر معمولی اضافہ ہواجس کی وجہ سے جرائم کنٹرول سے باہر ہوتے جا رہے ہیں اگر فوری طور پر تھانوں کے ایس ایچ اوز کو واپس نہ بھجوایا گیا تو حالات مزید خراب ہونے کے ساتھ ساتھ اخراجات میں بھی بے انتہا اضافہ ہو جائیگا۔

ان خیالات کااظہار انہوں نے اخبار نویسوں سے خصوصی گفتگو کرتے ہوئے کیا۔ انہوں نے کہا کہ جنرل الیکشن سے قبل جہلم سمیت صوبہ بھر میں محکمہ پولیس میں اکھاڑ پچھاڑ کی گئی ، اعلیٰ افسران کے ساتھ ساتھ تھانوں کے ایس ایچ اوز کو بھی دوسرے ریجن میں تبدیل کر دیا گیا ۔ الیکشن ہونے کے باوجود ان ایس ایچ اوز کو واپس نہیں بھجوایا جارہا، ایس ایچ اوز کی بڑی تعداد نے واپسی کی درخواستیں جمع کروا رکھی ہیں انہوں نے کہا کہ ایس ایچ اوز کی واپسی نہ ہونے سے پولیس افسران میں بے چینی بڑھ رہی ہے اور ان کے کاموں میں دلچسپی بھی نہیں۔

ڈاکٹر فضل الحق (فضلی ) نے آئی جی پنجاب کلیم امام سے مطالبہ کیاہے جہلم سمیت صوبہ بھر کے تمام اضلاع کے ، ایس ایچ اوز کو واپس اضلاع میں تبدیل کیا جائے تا کہ جرائم میں کمی واقع ہو سکے ۔

متعلقہ مضامین

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button