مذہبی جماعتوں کا احتجاج: سڑکیں بلاک، عوام پریشان، نظام زندگی متاثر

0

جہلم/دینہ (عادل چوہدری+ چوہدری سہیل عزیز) سپریم کورٹ کی جانب سے آسیہ بی بی کی رہائی کے بعد ضلع جہلم سمیت ملک کے مختلف شہروں میں اب بھی احتجاج جاری ہے اور کئی سڑکیں بلاک ہیں جس کی وجہ سے عوام کو دفاتر اور کاروباری مراکز تک پہنچنے میں پریشانی کا سامنا کرنا پڑا۔

یہ بھی پرھیں: کوئی دھوکے میں نہ رہے کہ ریاست کمزورہے، اپوزیشن اور ادارے حکومت کے ساتھ ہیں۔ فواد چوہدری

انتظامیہ کو تحریک لبیک پاکستان کے راہنماسے مذاکرات میں خاطر خواہ پیش رفت نہ ہو سکی، پنجاب میں سرکاری تعلیمی ادارے چھٹی کے اعلان کے باوجود ضلع جہلم میں سرکاری تعلیمی ادارے معمول کے مطابق کھلے رہے جبکہ چند سکولوں میں بچوں کی حاضر نہ ہونے کی وجہ سے چھٹی دے دی گئی جبکہ پرائیوٹ سکولز اور وفاقی تعلیمی ادارے تعطیل کی وجہ سے بند رہے۔

ایک روز قبل سپریم کورٹ آف پاکستان نے توہین مذہب کیس میں آسیہ مسیح کی سزائے موت کو کالعدم قرار دیتے ہوئے اسے بری کرنے کا حکم دے دیا تھا۔ سپریم کورٹ کی جانب فیصلہ آنے کے بعد مذہبی جماعتوں کی جانب سے دینہ، سوہاوہ، جہلم ، پنڈدادنخان، سرائے عالمگیر، اسلام آباد، لاہور اور کراچی سمیت ملک کے دیگر حصوں میں احتجاج شروع کردیا گیا تھا۔

احتجاج کے دوران مظاہرین نے سڑکوں کو بلاک کردیا تھا جبکہ متعدد علاقے بند بھی کروادیے تھے، جس کی وجہ سے نظام زندگی مفلوج ہوگیا تھا۔آج بھی مظاہرین اہم شاہراوں پر دھرنا دیے بیٹھے ہیں جس کی وجہ سے لوگوں کو دفاتر اور کاروباری مراکز پر پہنچنے میں دشواری کا سامنا کرنا پڑا۔

مذہبی جماعتوں کے کارکن ابھی تک پنجاب بھر کی طرح ضلع جہلم میں بھی احتجاجی طور پر جی ٹی روڈ اور ریلوے ٹریک جام کیے ہوئے ہیں ،ایک روز گزرنے کے باوجود بھی صورتحال جوں کی توں ہے،للِہ ٹاؤن میں بھی شٹرڈوان، تمام مارکیٹ دوکانیں بازار بند ہیں جبکہ جی ٹی روڈ پر گاڑیوں کی لمبی قطاریں لگی ہوئی ہیں۔

انتظامیہ کے سرپرست تحریک لبیک پاکستان جہلم سے مذاکرات بھی ہوئے مگر کوئی خاص پیش رفت نہیں ہوئی، تحریک لبیک کی طرف سے گزشتہ رات کی طرح رات کو جی ٹی روڈ کی ایک سائیڈ کھولنے کی صرف یقین دہانی کرائی گئی۔

ادھر سپریم کورٹ آف پاکستان نے توہین مذہب کیس میں آسیہ مسیح کی سزائے موت کو کالعدم قرار دیتے ہوئے انہیں بری کرنے کا حکم دینے کے خلاف سوہاوہ بار ایسوسی ایشن نے مکمل ہڑتال کی اور عدالتوں کا بائیکاٹ کیا۔

ایس ایس پی موٹروے پولیس ملک مطلوب نے میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ جی ٹی روڈ پر سفر کرنے والے تمام مسافر غیرضروری سفر سے گریز کریں۔ جی ٹی روڈمندرہ، سوہاوہ، دینہ، جہلم، سرائے عالمگیر اورکھاریاں جی ٹی روڈ مختلف مقامات پربند ہے۔


امن و امان کی صورتحال کے پیش نظر ڈپٹی کمشنر جہلم محمد سہیل خواجہ نے ڈسٹرکٹ ہیڈ کوارٹر ہسپتال جہلم، ٹی ایچ کیو سوہاوہ، ٹی ایچ کیو پنڈدادنخان، آر ایچ سی دینہ سمیت جہلم کے دیگر سرکاری ہسپتالوں کو ہائی الرٹ کر دیا، تمام ہسپتالوں میں میڈیکل، نرسنگ، پیرامیڈیکل اور دیگر انتظامی عملہ موجود رہیں گے۔

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.