جہلم

جہلم میں مخصوص ٹرانسپورٹرز کی اجارہ داری، مقررہ کرایہ سے زائد وصولی

جہلم: آرٹی اے سیکرٹری کی غفلت ، جہلم شہر و گردونواح میں مخصوص ٹرانسپورٹرز کی اجارہ داری، مقررہ کرایہ سے زائد وصولی ، ناکارہ ، کنڈم بسیں کباڑخانہ کی بجائے مضافاتی علاقوں کی سڑکوں پر رواں دواں ، مسافروں کی اوورلوڈنگ ، اوورچارجنگ معمول ، ناکارہ بسیں چلتی پھرتی موت ، اعلیٰ حکام سے نوٹس لینے کا مطالبہ۔

تفصیلات کے مطابق سیکرٹری آرٹی اے جہلم کی عدم دلچسپی کے باعث ٹرانسپورٹروں نے مسافروں کی زندگی اجیرن کر دی ، دینہ سے مضافاتی علاقوں میں چلنے والی بسوںکے مخصوص ٹرانسپورٹر ز نے اجارہ داری اوور لوڈنگ ، اوورچارجنگ کا سلسلہ عرصہ دراز سے شروع کر رکھا ہے ، مسافروں سے مقررہ کرایہ سے زائد کی وصولی معمول بن چکی ہے۔

دینہ سے مضافاتی علاقوں میں چلنے والی بسیں ناکارہ اور کنڈم ہو چکی ہیں ، جن کی اکثر بریکیں فیل ہو جاتی ہیں ، یہی نہیں بلکہ سردی کے اس شدید موسم میں ٹوٹے دروازے ، خراب کھڑکیاں ، خراب ویل بیلنسنگ مسافروں کے لئے شدید مشکلات میں اضافے کا باعث بن رہی ہیں ، سرد ٹھنڈی ہوا کے تیز رفتار جھونکے مسافروں کو سفر کے دوران برداشت کرنا پڑتے ہیں۔

بات یہاں ہی ختم نہیں ہوتی مسافروں کو بھیڑ بکریوں کی طرح لاد دیا جاتاہے اوورلوڈنگ کا عذاب بھی مسافروں کو برداشت کرناپڑتا ہے یہاں تک کہ شدید ٹھنڈ کے باوجود مسافروں کو بسوں کی چھتوں پر بٹھا دیا جاتاہے ، اگر کوئی احتجاج کرے تو اس سے بدتمیزی بلکہ مار دھاڑ سے بھی ٹرانسپوٹرز گریز نہیں کرتے ، دینہ میں ناکارہ بسیں کباڑ خانہ کی بجائے سڑکوں پر فراٹے بھرتی نظر آتی ہیں جو کہ موت کا سبب بنتی ہیں ، آرٹی اے سیکرٹری کی پراسرار خاموشی سوالیہ نشان بن چکی ہے۔

شہریوں نے اعلیٰ حکام سے نوٹس لینے کا مطالبہ کیاہے۔

متعلقہ مضامین

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button