جہلم

جہلم میں شہری پیشہ وربھکاریوں اور نشہ باز گدا گروں کے ہاتھوں ذلیل و خوار ہونے کے ساتھ ساتھ لٹنے لگے

جہلم: شہر و گردونواح میں گدا گری ایکٹ کے نافذ نہ ہونے سے شہری صحت مند و توانا پیشہ وربھکاریوں ، نشہ باز گدا گروں کے ہاتھوں ذلیل و خوار ہونے کے ساتھ ساتھ لٹنے لگے، سماجی ، رفاعی ،فلاحی ، مذہبی و شہری حلقوں کا شہر سمیت ضلع بھر میں گداگری ایکٹ نافذ العمل کروانے کا مطالبہ۔

تفصیلات کے مطابق شہر سمیت ضلع بھرمیں نامعلوم علاقوں سے آکر سڑکوں،چوک چوراہوں سمیت دیگر عوامی مقامات پر بہروپیے ، پیشہ ور گدا گر اور برقعہ پوش خواتین بھیک مانگنے کی آڑ میں گھروں میں داخل ہو کر چوریاں چکاریاں کرنے میں مصروف ہیں جبکہ شہری صحت مند و توانا پیشہ ور بھکاریوں، نشہ باز گدا گروں کے ہاتھوں سر عام ذلیل و خوار ہونے کے ساتھ ساتھ لٹ رہے ہیں۔

برقعہ پوش خواتین سمیت خوبروح بھکارنوں نے بازاروں میں خریداری کے لئے آنے والی خواتین کے پرس نکالنا ، چوریاں کرنا روزانہ کا معمول بنا لیا ہے جبکہ گلی‘ محلوں اور کالونیوں میں بھی بھکارنیں مختلف انداز میں بھیک مانگنے کی غرض سے گھروں میں داخل ہوکر وارداتیں کرنے سے بھی اجتناب نہیں کرتیں جبکہ گدا گری کی آڑ میں جسم فروشی کا دھندہ بھی تیزی سے پھیل رہا ہے ۔

شہریوں کا کہنا ہے کہ ضلعی انتظامیہ انسداد گدا گری ایکٹ پر عملدرآمد کو یقینی بنانے اور پیشہ ور بھکاریوں کیخلاف کارروائی عمل میں لائے تاکہ شہری ان بہروپیوں اور برقعہ پوش گداگروں کی لوٹ مار سے محفوظ رہ سکیں ۔

متعلقہ مضامین

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button