دینہ

انسانیت کوئی مذہب نہیں، مذہب دین اسلام ہے جو انسانیت کا درس دیتا ہے۔ امیر عبدالقدیر اعوان

دینہ: انسانیت کوئی مذہب نہیں ،مذہب دین اسلام ہے جو انسانیت کا درس دیتا ہے جہاں سے دین اسلام کو اُٹھا لیا جائے وہاں پھر انسانیت نہیں رہتی ،اللہ کریم ساری کائنات کے خالق ہیں آپ نے قرآن کریم میں بار بار والدین کے حقوق، اولاد کے حقوق بیان فرمائے ہیں کیونکہ مرد اور خاتون انسانی معاشرے کی بنیادی اکائی ہیں اور افزائش نسل کا سبب ہیں آنے والی نسلوں کا انحصار انہی دو اکائیوں پر ہے اگر ان میں بگاڑ آئے گا تو سارا معاشرہ متاثر ہوگا۔

ان خیالات کا اظہار امیر عبدالقدیر اعوان شیخ سلسلہ نقشبندیہ اویسیہ و سربراہ تنظیم الاخوان پاکستان کا جمعتہ المبارک کے موقع پر خطاب کرتے ہوئے کیا۔ انہوں نے کہا کہ اولاد کی تربیت نہ کرنا ہمیشہ کی تکلیف کا سبب بنتا ہے ،اولاد کی تربیت کے لیے ضروری ہے کہ والدین خود باعمل ہوں جب ہم خود عمل نہیں کریں گے تو اولاد کیسے سبق حاصل کرے گی تبلیغ کا سب سے خوبصورت انداز کردار ہے جو ہمیں صحابہ کرام ؓ سے ملتا ہے جنہوں نے براہ راست نبی کریم ﷺ سے تربیت لی۔

انہوں نے کہا کہ آج ہر کوئی آزادی کی بات کرتا ہے کہ ہمیں آزادی چاہیے ،انسانی آزادی وہ ہے جو اللہ کریم نے عطا فرمائی ہے اس سے آگے بڑھیں گے تو فساد ہوگا ،خرابی آئے گی ،آج بے دینی کو انسانی آزادی کہا جاتا ہے ہر ملک اپنے قانون کے تحت آزادی دیتا ہے اللہ کریم نے جو حدودو قیود مقرر فرمائی ہیں اس بات کی سمجھ کیوں نہیں آتی۔

امیر عبدالقدیر اعوان نے کہا کہ ہمیں اپنی اولاد کو دنیاوی تعلیم کے ساتھ ساتھ دینی تعلیم بھی دینی چاہیے تا کہ علوم حاصل کرنے کے ساتھ ان کی تربیت بھی ہو کیونکہ تعلیم میں اگر کمی رہ جائے تو تربیت اس کو پورا کر دیتی ہے اگر تربیت میں کمی رہ جائے تو پھر اسے کوئی پورا نہیں کر سکتا،دنیاوی علوم حاصل کریں لیکن دنیا ہی کو کل جاننا درست نہیں ،اولاد کو تعلیم دلوائیں ان کو ذریعہ معاش کے قابل بنائیں یہ سب والدین کی ذمہ داری میں شامل ہے،اللہ کریم اپنی مقرر کردہ حدود کے مطابق ہمیں اپنی زندگیاں بسر کرنے کی توفیق عطا فرمائیں،اللہ کریم ہمیں صحیح شعور عطا فرمائیں۔

متعلقہ مضامین

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button