جہلم

جہلم میں اشیائے خوردونوش میں ملاوٹ عروج پر، چیزوں کا خالص ملنا ناممکن ہوگیا

جہلم: شہر اور گردونواح میں اشیائے خوردونوش میں ملاوٹ عروج پر ، دودھ ، دہی ، گھی ، چائے کی پتی ، مصالحہ جات ، سرخ مرچ، بیسن اور دیگر چیزوں کا خالص ملنا ناممکن ہوگیا، سب سے زیادہ ملاوٹ دودھ ، دہی ، گھی ، چائے کی پتی ، مصالحہ جات ، سرخ مرچ، بیسن میں کی جارہی ہے۔

شہر کے مختلف علاقوں میں کیمیکلز وغیرہ سے تیار دودھ، دہی کی فروخت بھی روز کا معمول بن چکی ہے ، دودھ ، دہی کے نام پر کھلے عام صحت زہر فروخت کیا جا رہاہے ، مضر صحت اشیاء خوردونوش کے استعمال سے شہریوں کی بہت بڑی تعداد ہیپاٹائٹس ، ٹی بی اور گردوں ، معدہ ،جگر اور دیگر امراض میں مبتلا ہورہی ہے۔

ڈاکٹرز کا کہنا ہے کہ اشیاء خوردونوش میں ملاوٹ کے باعث انسانی زندگیوں پر انتہائی مضر اثرات مرتب ہو رہے ہیں ، اس سلسلے میں شہریوں نے وزیراعلیٰ پنجاب سمیت اعلیٰ حکام سے نوٹس لینے کا مطالبہ کیا ہے ۔

متعلقہ مضامین

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button