جہلم

ضلع جہلم میں کروڑوں روپے کی لاگت سے تعمیر سٹرک پراونشل ہائی وے کو منہ چڑھانے لگی

جہلم: محکمہ پراونشل ہائی وے کی انتظامیہ کی ناقص حکمت عملی ، کروڑوں روپے کی لاگت سے تعمیر سٹرک پراونشل ہائی وے کو منہ چڑھانے لگی ،مصری موڑ تا پنڈدادنخان تک کشادہ کی جانے والی سٹرک میں موجود پلیوں کو از سر نو تعمیر ہی نہیں کیا گیا جس کے باعث پلیاں تنگ ہو گئی ہیں جس کے باعث حادثات میں اضافہ ہو گیا ہے۔
تفصیلات کے مطابق مصری موڑ تا پنڈدادنخان تک نئی تعمیر ہونے والی سٹرک پر موجود پل اور پلیاں جو کہ ٹوٹ پھوٹ کا شکار ہو چکی ہیں اور نئی تعمیر ہونے والی سڑک بھی گڑھوں میں تبدیل ہو رہی ہے۔
ٹھیکیدار نے ناقص وغیر معیاری میٹریل استعمال کیا جس کے باعث چند ماہ بعد ہی کروڑوں روپے کی لاگت سے تعمیر ہونے والی کشادہ سڑک محکمہ پروانشل ہائی وے کے افسران کو منہ چڑھا رہی ہے۔
بااثر ٹھیکیدار نے ڈنگ ٹپاؤ پالیسی کے تحت ناقص و غیر معیاری میٹریل کا بے دریغ استعمال کیا جس کیوجہ سے گزشتہ سال تعمیر ہونے والی سڑک جگہ جگہ سے زمین میں دھنس چکی ہے اور بیشتر مقامات پر گڑھوں میںتبدیل ہو گئی ہے۔
علاقہ مکینوںنے چیئرمین نیب ، ڈی جی اینٹی کرپشن ، وزیر اعلیٰ پنجاب، چیف سیکرٹری پنجاب کمشنر راولپنڈی ، ڈپٹی کمشنر جہلم سے مطالبہ کیا ہے کہ ناقص و غیرمعیاری میٹریل کا استعمال کرنے والے ٹھیکیدار سے لوٹی گئی دولت کا حساب لیا جائے اور گڑھوں میں تبدیل ہونے والی سڑک کو مرمت کروایا جائے تاکہ شہریوں کی گاڑیاں کھٹارہ بننے سے بچ سکیں ۔

متعلقہ مضامین

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button