جہلماہم خبریں

جہلم پولیس کا کمال،گھریلو جھگڑے پر نوجوان کو گرفتار کر کے منشیات برآمدگی کا کیس ڈال کر جیل بھجوا دیا

جہلم: تھانہ صدر پولیس کا کمال ،گھریلو جھگڑے پر نوجوان کو گرفتار کر کے ڈیڑھ کلو منشیات برآمدگی کا کیس ڈال کر جیل بھجوا دیا، نوجوان کی والدہ نے ڈی پی او شاکر حسین داوڑ سے انصاف کی اپیل کر دی۔

تفصیلات کے مطابق ٹاہلیانوالہ کی رہائشی تعظیم اختر نے میڈیا سے بات کرتے ہوئے کہا کہ میرے بیٹے نبیل نے گھر میں لڑائی جھگڑا کر کے اپنے آپ کو کمرے میں بند کر لیا اور کمرے میں پڑے ہوئے کپڑوں کو آگ لگا دی تو میرے خاوند نے اس کے دوست مرزا عاصم جو کہ تھانہ صدر میں کانسٹبل ہے کو تقریباً شام 7 بجے فون کرکے کہا کے نبیل نے گھر میں یہ حرکت کی ہے اس کو تھانے لے جائیں اور اس کو ڈرائیں تا کہ اس کو سبق حاصل ہو اور یہ آئندہ ایسی حرکت نہ کرے۔

تعظیم اختر نے بتایا کہ مرزا عاصم دوسرے دن 12 بجے ھمارے گھر آیا اس کے ساتھ مرزا اقبال، سلیمان اور بلال اس کے ساتھ تھے صبح جب یہ ھمارے گھر آے تو میں گھر پر نہیں تھی میری بہن اور میرا خاوند گھر میں موجود تھے انہوں نے آ کر نبیل کا پوچھا تو میرے خاوند نے کہا کہ وہ سو رہا ہے آپ اس کو خود جگا لیں تو انہوں نے نبیل کو جگایا تو اس کو کہا کہ تھانے چلو اس پر میری بہن نے کہا کہ اس نے تو ابھی تک ناشتہ بھی نہیں کیا تو مرزا عاصم نے کہا کہ آپ اس کے لیے ناشتہ تیار کریں وہ ناشتہ تیار کرنے چلی گئی تو مرزا عاصم باہر چلا گیا۔

تعظیم اختر نے بتایا کہ مرزا عاصم نے تھانہ صدر میں فون کرکے SHO کو بلا لیا اور انہوں نے ہمارے گھر کی تلاشی لینا شروع کر دی اور نبیل کو تھپڑ مارنے شروع کر دیے گھر کی تلاشی کے دوران انہیں کچھ نہ ملا اور انہوں نے کہا کہ نبیل کو ہم تھانے لے کر جا کر سمجھائیں گے تا کہ آیندہ یہ ایسی حرکت نہ کرے تھانے لے جا کر انہوں نے میرے بیٹے پر9C کا مقدمہ درج کر دیا میں شام کو تھانے گئی تو مجھے پتا چلا کہ میرے بیٹے پر منشیات کا پرچہ درج کر دیا گیا ہے۔

تعظیم اختر نے بتایا کہ میں نے پولیس والوں کو کہا کہ ہم نے آپ کو خود فون کرکے بلایا تھا کہ ہمارا بیٹا گھر میں لڑائی جھگڑا کرتا ہے اس کو تھانے لے جائیں اور تھوڑا ڈرآئیں تا کہ آیندہ ایسی حرکت نہ کرے آپ نے اس پر منشیات کا پرچہ دے دیا میں نے ان کی منتیں کی کے آپ نے ہمارے گھر کی تلاشی لی تھی اور کچھ بھی ھمارے گھر سے نہیں نکلا تھا تو تھانے آ کر چرس کیسے نکل آئی انہوں نے میری ایک سنی اور ہمارے بیٹے کو جیل بھیج دیا۔

تعظیم اختر نے بتایا کہ میں ڈی پی او صاحب سے اپیل کرتی ہوں کہ میرے بیٹے کی آپ خود انکواری کریں جب پولیس ہمارے گھر گئی تھی اور ہمارے محلے کے لوگو اگھٹے ہو گئے تھے ان لوگوں کے سامنے پولیس نے ہمارے گھر کی تلاشی لی تھی اور کچھ بھی نہیں نکلا تھا اگر میرا بیٹا منشیات فروش ہوتا تو میں لوگوں کے گھروں میں کام کرتی اس لیے میں آپ سے اپیل کرتی ہوں کے آپ انکواری کر کے ہمیں انصاف فراہم کریں۔

متعلقہ مضامین

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button