جہلم

فوڈ اتھارٹی کے چھاپے، ہوٹل ملازمین سول ہسپتال جہلم میں دربدر، ہسپتال انتظامیہ بھی پریشان

جہلم: فوڈ اتھارٹی کے چھاپے ، ہوٹل ملازمین سول ہسپتال میں دربدر، میڈیکل چیک اپ کیلئے رش کے باعث ہسپتال انتظامیہ بھی پریشان۔میڈیکل کیلئے الگ کاونٹر بنایا جائے، ہوٹلز مالکان کی اپیل

تفصیلات کے مطابق پنجاب فوڈ اتھارٹی کی جانب سے ہوٹلز اور کھانے پینے کی اشیاء فروخت کرنے والوں کے میڈیکل سرٹیفیکیٹ چیک کرنے کے لئے دن رات چھاپے جاری ہیں اور میڈیکل سرٹیفکیٹ بنوانے کیلئے انتہائی کم کا وقت دیا جاتا ہے جس کی وجہ سے سینکڑوں ہوٹلز مالکان، بیرے اور دیگر ملازمین میڈیکل کیلئے ہسپتال پہنچ جاتے ہیں جہاں تعمیراتی کام کی وجہ سے تنگ جگہ اور مریضوں کی بیش بہا تعدا د کے باعث میڈیکل کروانا ممکن ہی نہیں ہوتا، ہسپتال انتظامیہ کا کہنا ہے کہ معمول کے مریضوں کے رش کے باعث میڈیکل سرٹیفکیٹ بنوانے والوں کیلئے صرف تین دن مختص ہیں اس دوران ہی سرٹیفکیٹ بنائے جائیں گے۔

ملازمین کا کہنا ہے کہ ہزاروں افراد کی لائنوں میں سارا دن لگے رہتے ہیں ایک دن میں تو پرچی نہیں بنتی ،جس کے بعد خون ٹیسٹ اور ایکسرے کیلئے بھی خوار ہو نا پڑتا ہے جبکہ میڈ یکل سپیشلسٹ سے ملنا بھی پل صراط پار کرنے کے برابر ہے ۔ ہم کئی کئی دن سے خوار ہورہے ہیں لیکن میڈیکل سرٹیفکیٹ نہیں بن رہے۔

ملازمین نے بتایا کہ ہسپتال انتظامیہ کا کہنا ہے کہ ایک ہوٹل کے تمام ملازمین ایک ہی وقت میں میڈیکل کیلئے آئیں گے تو میڈیکل ٹیسٹ ہو گا انفرادی طور پر کسی ملازم کا میڈیکل نہیں کیا جائے گا ملازمین کا کہنا ہے کہ سارے ملازمین اگر ہسپتال پھرتے رہیں تو کاروبار تو کئی کئی دن بند رہے گا یہ سراسر زیادتی ہے جبکہ فوڈ اتھارٹی والے ہزاروں روپے جرمانے کرنے پر کمر بستہ ہیں جو کسی نہ کسی بہانے سے جرمانے کرنے کو ترجیح دیتے ہیں ۔

ہوٹل مالکان ، ملازمین نے ڈی سی جہلم سے مطالبہ کیا ہے کہ میڈیکل سرٹیفکیٹ کیلئے ہسپتال میں الگ کاونٹر بنایا جائے تاکہ معمول کے مریضوں اور میڈیکل کے لئے آنے والوں کو پریشانی سے نجات مل سکے ۔

متعلقہ مضامین

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button