انسانیت سے بھلائی اور غریب پروری کیساتھ اپنا محاسبہ بہترین جہا د ہے ، علامہ آصف رضا

0

دینہ: ضمیر کو جج بنا کے خود سے سوال کیجئے کہ آپ مقصد خلقت کو پورا کر رہے ہیں ؟جواب ہاں میں آئے تو سمجھ لو کہ آپ زندہ ہو اور اگر جواب نفی میں ہو تو تم چلتی پھرتی لاش ہو جو بے مقصد زندگی گزار رہا ہے کردار سنوارنے کیلئے اسوہ محمدؐو آل ؑ محمد ؐ کو مشعل راہ بنا کر منزل کا حصول ممکن ہے۔

یہ بات علامہ آصف رضانے کھڑکا سیداں نزد دینہ میں سید مطلوب حسین شاہ کے والدین مرحومین کی روح کو ایصال ثواب کیلئے منعقد ہ سالانہ مجلس عزاء سے خطاب کے دوران کہی۔ انہوں نے کہا کہ انسانیت سے بھلائی اور غریب پروری کیساتھ اپنا محاسبہ بہترین جہا د ہے جو اللہ کی راہ میں جہاد کرتے ہوئے دنیا چھوڑ جاتے ہیں وہ مر کے بھی ہمیشہ زندہ رہتے ہیں محمد ؐو آلؑ محمدؐ سے مودت ابدی زندگی کی دلیل ہے جبکہ ان سے دوری جنت سے دوری کی وجہ بنے گی۔

انہوں نے کہا کہ عزاداری سید الشہداء امام حسینؑ ہما ری شہ رگ حیات اور ذریعہ نجات ہے دنیا آخرت کی کھیتی ہے آج جو کچھ کاشت کرنا ہے کل وہ فصل کا ٹنی ہوگی۔

مجلس عزاء سے ذاکر اہل ِ بیت شاہد قمر ،ذاکر ندیم جعفری ،ذاکر ضمیر جعفری،اور حاجی گل بہار نے بھی خطاب کیا جبکہ پروگرام عالم اسلام کے اتحاد پاکستان کے استحکام افواج پاکستان کی کامیابیوں اور شہدائے وطن و ملت اور اموات مومنین و مسلمین کے درجات کی بلندی کی دعا پر اختتام پذیر ہوا۔

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.