جہلم

گرین اینڈ کلین پاکستان کا نعرہ کاغذی کاروائیوں تک محدود، گلی محلے گندگی کے ڈھیروں میں تبدیل

جہلم: گرین پاکستان کلین پاکستان کا نعرہ کاغذی کاروائیوں تک محدود، اندرون شہر کے گلی محلے گندگی کے ڈھیروں میں تبدیل ، شہری سراپا احتجاج، شہریوں کا ڈپٹی کمشنر سے نوٹس لینے کا مطالبہ۔

تفصیلات کے مطابق موجودہ حکومت نے گرین پاکستان کلین پاکستان کا نعرہ بلند کیا جسے بلدیاتی نمائندوں نے ناکام بنانے کے لئے ایڑھی چوٹی کا زورلگانا شروع کر رکھا ہے ، اندرون شہر سمیت ملحقہ آبادیوں میں بھی کوئی صفائی کا معقول بندوبست نہیں اور نہ ہی فلتھ ڈپو بنائے گئے ہیں جس کی وجہ سے گھروں سے ملحقہ خالی پلاٹ فلتھ ڈپوؤں کی منظر کشی کر رہے ہیں جس کے باعث شہری تعفن کا شکار ہورہے ہیں ،اسی وجہ سے گلیوں میں پھیلنے والی گندگی سے بچے موذی امراض کا شکار ہو رہے ہیں۔

شہریوں کا مزید کہنا ہے کہ بلدیاتی نمائندوں کو کلین اینڈ گرین مہم کو کامیاب بنانے کے لئے گلی محلوں اور مضافاتی علاقوں میں کامیاب بنانا چاہیے جبکہ گندگی کوڑے کو ایک جگہ اکٹھا کرنے کے لئے انتظامیہ کو فلتھ ڈپو قائم کرنے چاہیے، تاکہ شہری اپنے گھروں کا کوڑا کرکٹ فلتھ ڈپوؤں میں پھینک سکیں ۔

شہریوں نے ڈپٹی کمشنر سے مطالبہ کیاہے کہ خالی پلاٹوں کے مالکان کو پلاٹ کی دیکھ بھال ، صفائی ستھرائی کے لئے نوٹسسزجاری کیئے جائیں اور فلتھ ڈپو بنوائے جائیں تاکہ گرین پاکستان کلین پاکستان کامشن حقیقی معنوں میں پورا ہو سکے ۔

متعلقہ مضامین

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button