جہلم

کچرا اور گندگی جہلم شہر کی پہچان بن گیا، مچھروں اور مکھیوں کی افزائش کے باعث شہریوں کو پریشانی کا سامنا

جہلم: کچرا اور گندگی شہر کی پہنچان بن گیا، گندگی کے ڈھیروں پر مچھروں اور مکھیوں کی افزائش کے باعث شہریوں کو شدید پریشانی کا سامنا۔ سیوریج کا نظام بھی درہم برہم، گلی محلوں میں کیڑوں مکوڑوں مکھیوں اور مچھروں کا راج، مکھیوں اور مچھروں کی یلغار کے باعث بیماریاں پھیلنے کا خدشہ لاحق ہوگیا۔

تفصیلات کے مطابق شہر سمیت ملحقہ علاقوں کے گلی محلے کچرے اور گندگی سے اٹے پڑے ہیں جہاں کیڑوں ، مکوڑوں ،مچھروں ،مکھیوں کی تعداد میں روز بروز اضافے کے باعث علاقہ مکین اْلٹی، دست، ٹائیفائیڈ، ملیریا اور دیگر امراض میں مبتلا ہورہے ہیں ، شہریوں کا کہنا ہے کہ میونسپل کارپوریشن کے وارڈز کی کل تعداد 36 ہے جبکہ سینٹری ورکرز کی تعداد 1 سو سے زائد ہے۔

میونسپل کارپوریشن میں سینٹری ورکرز کی فوج ظفرموج ہونے کے باوجود اندرون شہر کے گلی محلوں میں کچرہ کنڈی کے لگنے والے ٹیلے میونسپل کارپوریشن کی کارکردگی پر سوالیہ نشان ہیں۔

شہریوں کا اس حوالے سے کہنا ہے کہ گرمیوں کے موسم کا آغاز ہو تے ہی گندگی کی وجہ سے مکھیوں مچھروں کی افزائش میں تیزی سے اضافہ ہو رہا ہے۔ ایڈمنسٹریٹر میونسپل کارپوریشن / ڈپٹی کمشنر سے نوٹس لیتے ہوئے اندرون شہر کے گلی محلوں کے خالی پلاٹس میں جمع ہونے والی گندگی اور نالوں کی بروقت صفائی کروانے کا مطالبہ کیا ہے تاکہ شہری بیماریوں سے محفوظ رہ سکیں ۔

متعلقہ مضامین

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button