جہلم

جہلم میں چائلڈ لیبر کا خاتمہ نہ ہوسکا، محکمہ لیبرکے ذمہ داران نے خاموشی اختیار کرلی

جہلم: شہر اور گردونواح کے علاقوں میں چائلڈلیبر کا خاتمہ نہ ہوسکا،محکمہ لیبرکے ذمہ داران نے خاموشی اختیار کرلی۔
حکومتی احکامات کے باوجود شہر اور گردونواح کے علاقوں دینہ ، سوہاوہ ، پنڈدادنخان، کھیوڑہ ، جہلم سمیت دیگر علا قوں میں چائلڈ لیبر کا خاتمہ نہ ہو سکا جس کی وجہ سے ہوٹلوں ،میرج ہالز، مارکیز، موٹر سائیکل اور کاروں کی ورکشاپس ،دکانوں،منی فیکٹریوں میں کمسن چھوٹے بچوں سے زبردستی کام لینا معمول بن چکا ہے۔
سردی کے اس موسم میں رات گئے تک چھوٹے چھوٹے معصوم بچے ہوٹلوں ،میرج ہالز، مارکیز، موٹر سائیکل اور کاروں کی ورکشاپس ،دکانوں،منی فیکٹریوں میں مشقت کرتے نظر آتے ہیں۔
شہریوں نے بتایاکہ متعدد مرتبہ محکمہ لیبر کے ذمہ داران کی توجہ اس طرف مرکوز کرواچکے ہیں مگرمحکمہ لیبر کے متعلقہ افسران مال بناؤ ڈنگ ٹپاؤ پالیسی پر گامزن ہیں جس کیوجہ سے ننھے ہاتھ رات گئے تک محنت مشقت کرتے دکھائی دیتے ہیں۔
شہریوں نے وزیراعلیٰ پنجاب، کمشنر راولپنڈی ، ڈپٹی کمشنر سے نوٹس لینے کامطالبہ کیاہے۔

متعلقہ مضامین

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button