جہلم

تھانہ کلچر بدل جائے تو 75 فیصد مسائل خود بخود حل ہو جائیں گے۔ چوہدری عابد محمود

جہلم: تھانوں میں شہریوں کی تذلیل معمول کی بات بن چکی ہے ، عام شہری کے لئے موجودہ نظام میں انصاف حاصل کرنا مشکل ہی نہیں ناممکن سا عمل بن چکا ہے،تھانہ کلچر بدل جائے تو 75 فیصد مسائل خود بخود حل ہو جائینگے۔

ان خیالات کا اظہار چیئرمین جہلم پریس کلب چوہدری عابد محمود نے تھانہ کلچر کے موضوع پر صحافیوں سے بات کرتے ہوئے کیا۔ انہوں نے کہا کہ ضلع بھر میں تھانہ کلچر کے فرسودہ نظام نے ضلع کو بہت نقصان پہنچایا ہے ، جہاں پر جرائم کا خاتمہ ہونا چاہیے وہاں سے ہی تھانہ کلچر کے منفی عمل کی وجہ سے جرم پنپنا شروع ہوتا ہے ، تھانوں میں عام شریف آدمی کی رسائی ممکن نہیں شریف آدمی غلطی سے انصاف کیلئے تھانے چلا بھی جائے تو اس کے ساتھ جو سلوک ہوتا ہے وہ کسی سے ڈھکی چھپی بات نہیں۔

انہوں نے مزید کہا کہ ارباب اختیار کو چاہیے کہ تھانوں میں تعینات پولیس افسران و اہلکاروں کی تربیت کے کورس منعقد کروائیں تاکہ تھانوں میں آنے والے سائلین کی تذلیل کی بجائے انہیں پولیس افسران اہلکار عزت و احترام کے ساتھ پیش آئیں تاکہ پولیس کا وقار بحال رہ سکے۔

متعلقہ مضامین

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button