جہلم کے علاقہ میں عوامی گزر گاہ میں بنائے جانے والے غیر قانونی گٹر کا تنازعہ شدت اختیار کر گیا

0

جہلم: رجی پور میں عوامی گزر گاہ میں بنائے جانے والے غیر قانونی گٹر کا تنازعہ ، ڈی سی کے احکامات پر بلدیہ کشمکش کا شکار ، مدعی راجہ طاہر کا سیاسی مداخلت کا الزام۔

بلدیہ جہلم کی حدود میں واقع ٹاہلیانوالہ کے محلے رجی پور میں عوامی گزرگاہ کے عین بیچ بنائے جانے گٹر کو ہٹانے کا تنازعہ ضلعی انتظامیہ کیلئے درد سر بن گیاہے۔

اس حوالے سے سابق کونسلر اور مقامی رہائشی راجہ طاہر نے بتایا کہ مقامی رہائشی ارشدمحمود نامی شخص کی جانب سے غیر قانونی گٹر بنانے کے خلاف ڈی سی جہلم کو متعدد درخواستیں دی جس کے بعد ڈی سی سے اہل علاقہ کی ملاقات کے بعد ڈی سی جہلم کی جانب سے گٹر کو بند کروانے کے احکامات تو جاری کر دئیے گئے لیکن سی او بلدیہ نے عمل درآمد کرنے سے انکار کردیا ہے۔

راجہ طاہر نے بتایا کہ ڈی سی کے احکامات کھل کھلا چیلنج کیا جارہا ہے اور سی او بلدیہ عمل درآمد کروانے میں سنجیدہ نہیں ہیں ۔

انہوںنے بتایا کہ پہلے گٹر بنایا گیا جس کے بعد اہل علاقہ کے احتجاج پر اس کی اجازت حاصل کرنے کیلئے تین دن بعد درخواست جمع کروا دی گئی ، حالانکہ ہم نے عوامی راستہ میں غیر قانونی طور گٹر بنانے کے خلاف پہلے ہی ڈی سی کو درخواست کے ذریعے آگاہ کر دیا تھا۔

انہوں نے کہا کہ گزشتہ روز سی او بلدیہ متعدد ملازمین اور مقامی پولیس کے ساتھ موقع پر پہنچے اور ٹال مٹول کرکے واپس آ گئے ۔ سابقہ کونسلر کا کہنا ہے کہ علاقے میں کشیدگی کی صورتحال پائی جاتی ہے۔

اس حوالے سے مدعی کا کہنا ہے کہ عوامی راستہ کو بلاک کرنے کی کسی کو اجازت نہیں ہونی چاہئیے ، علاقے کے مرکزی چوک میں بنا گٹر آمدورفت میں شدید مشکلات پید ا کر رہا ہے۔ اعلی حکام فوری طور پر عوامی گزرگاہ سے اس گٹر کو ختم کروائیں۔

اس حوالے سے سی او بلدیہ نے موقف دیتے ہوئے کہا کہ اس علاقے میں پانچ چھ مزید گٹر لوگوں نے گلیوں کے اندر بنائے ہوئے ہیں ہم نے سب کو نوٹس دے دئیے ہیں اوربہت جلد تمام غیر قانونی تجاوزات کا خاتمہ کردیا جائے گا ۔

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.