ڈومیلیویڈیوزاہم خبریں

سوہاوہ کے علاقہ ڈومیلی میں قتل کا عینی شاہد ہونا جرم بن گیا

سوہاوہ کے علاقہ ڈومیلی میں قتل کا عینی شاہدہونا جرم بن گیا، سب انسپکٹر نے معمر خاتون اور ان کے خاندان کا جینا دو بھر کر دیا، تھانہ ڈومیلی پولیس پیٹی بھائی کو بچانے کے لیے متحرک، متاثرہ خاندان کا وزیر اعلی پنجاب سے نوٹس لینے کا مطالبہ
تفصیلات کے مطابق چند ہفتے قبل ڈی پی او جہلم رانا عمر فاروق کی ایک پوسٹ سوشل میڈیا پر وائرل ہوئی جس میں وہ زمین پر بیٹھ کر معمر خاتون سے انکا مسئلہ پوچھ رہے ہیں۔
اس تصویر کی بہت پذیرائی ہوئی، محکمہ پولیس اس تصویر کو مثال بنا کر پیش کرنے لگا تھا، یہ بزرگ خاتون تھانہ ڈومیلی کے علاقہ دہرہ کی رہائشی ہے۔

گلزار بیگم کے مطابق اس کے گاؤں کے رہائشی بااثر ظہور نامی سب انسپکٹر نے ان کا اور ان کے خاندان کا جینا دوبھر کر رکھا ہے اور ان پر آئے روز تشدد اور جھوٹے مقدمات بنانا معمول بن گیا۔
گلزار بی بی کے مطابق ان کا قصور یہ ہے کہ چند سال قبل ایک شخص کا قتل ہوا جس کا عینی شاہد ان کا بیٹا خالد محمود تھا۔ گلزار بی بی اپنے بیٹوں کے ساتھ متعدد مرتبہ حصول انصاف کے لیے ڈی پی او آفس کے چکر لگا چکی ہے مگر کوئی سنوائی نہیں ہوئی۔
گلزار بی بی اور اسکے بیٹے خالد محمود نے وزیر اعلی پنجاب اور آئی جی پنجاب سے فوری نوٹس لینے کا مطالبہ کیا ہے ۔
ترجمان جہلم پولیس کے مطابق گلزار بی بی نے ڈسٹرکٹ پولیس آفس جہلم میں درخواست دی تھی کہ مقدمہ نمبر 36 مورخہ15 مارچ کو بجرم 337Aii/342/147/149ت پ تھانہ ڈومیلی کی انکوائری ڈسٹرکٹ پولیس آفس جہلم میں کی جائے جس پر انکوائری کا فوری حکم جاری کیا اور انکوائری پر ڈی ایس پی ہیڈکوارٹرز جہلم کو مامور کیا۔
ترجمان جہلم پولیس نے بتایا کہ انکوائری رپورٹ مکمل کی جاچکی ہے جس کے تحت گلزار بی بی کا اس وقوعہ میں ملوث ہونا ثابت نہ ہو سکا اور انہیں بے گناہ قرار دیا جا چکا ہے جبکہ تفتیشی افسر نے گلزار بی بی کا بروقت میڈیکل کروایا جس کی رپورٹ تاحال موصول نہ ہوئی ہے۔
ترجمان نے بتایا کہ میڈیکل رپورٹ موصول ہونے پر کاروائی عمل میں لائی جائے گی جبکہ 3 ملزمان یوسف، عبدالمالک، جواد گرفتار ہو کر جوڈیشل ہو چکے ہیں اور 2 ملزمان مسماۃ زینت اور مسماۃ زینب بر ضمانت عبوری پر ہیں۔ اس حوالے سے تھانہ ڈومیلی پولیس جہلم میرٹ اور انصاف کے تقاضوں کو مد نظر رکھتے ہوئے تفتیش کو مکمل کر رہے ہیں۔

متعلقہ مضامین

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button