جہلم

ضلع جہلم میں غیر قانونی پٹرول کی فروخت اور انسانی جانوں سے کھیلنے کے خطرناک اڈے قائم ہو گئے

جہلم: ضلع کی چاروں تحصیلوں میں درجنوں کے قریب غیر قانونی ڈیزل و پٹرول کی ایجنسیاں سر عام مقررہ نرخوں سے زائد قیمتوں پر پٹرول اور ڈیزل فروخت کرنے میں مصروف۔ سول ڈیفنس کے ذمہ داران نے غیر قانونی دھندہ کرنے والوں کو کھلی چھوٹ دے دی۔ ناقص وغیر معیاری ڈیزل و پٹرول کی وجہ سے شہریوں کی گاڑیاں ، موٹر سائیکلز کھٹارہ بننا شروع ہوگئیں۔ محکمہ سول ڈیفنس کے ذمہ داران کی خاموشی سوالیہ نشان ہے۔

تفصیلات کے مطابق شہر سمیت ضلع کی چاروں تحصیلوں ، تحصیل پنڈدادنخان، تحصیل جہلم، تحصیل دینہ، تحصیل سوہاوہ کے اندرونی و مضافاتی علاقوں میں غیر قانونی پٹرول کی فروخت اور انسانی جانوں سے کھیلنے کے خطرناک اڈے قائم ہو گئے ہیں جانی و مالی خطرات لاحق ہونے کے باوجود محکمہ سول ڈیفنس کے افسران و اہلکار کسی قسم کے کوئی اقدامات بروئے کار لانے میں ناکام دکھائی دیتے ہیں۔

بااثر تیل مافیا نے سول ڈیفنس کے عملے کی سرپرستی میں سر عام غیر قانونی پٹرول کی فروخت کا مکروہ دھندہ شروع کر رکھا ہے تیل مافیا حکومت کے مقررہ کردہ نرخوں سے کئی گنا اضافی رقم وصول کرنے کے باوجود پٹرول و ڈیزل میں ملاوٹ کرکے شہریوں کی موٹر سائیکلوں گاڑیوں کی تباہی کا موجب بن رہے ہیں۔

کھلے عام فروخت ہونے والے ناقص و غیر معیاری ڈیزل و پٹرول ایجنسیوں کے مالکان نے اردگرد کے رہائشیوں کی جانوں کی پرواہ کئے بغیر گھناؤنا کارروبار شروع کر رکھا ہے جس کی وجہ سے علاقہ مکینوں کے سروں پر خوف کے سائے منڈلاتے رہتے ہیں۔

شہریوں نے کمشنر راولپنڈی سے مطالبہ کیا ہے کہ ضلع جہلم میں قائم درجنوں غیر قانونی ایجنسیوں کے خلاف آپریشن کروا کر مکروہ دھندے میں ملوث افراد کے خلاف مقدمات درج کروائے جائیں تاکہ شہریوں کی گاڑیاں محفوظ اور پڑوسیوں کی زندگیاں محفوظ رہ سکیں۔

متعلقہ مضامین

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button