کئی سال گزرنے کے باوجود بھی فرنٹ ڈیسک کے ملازمین مستقل نہ ہوسکے

0

جہلم: کئی سال گزرنے کے باوجود بھی فرنٹ ڈیسک کے ملازمین مستقل نہ ہوسکے، ماہانہ کی بنیاد پر باقاعدہ تنخواہ نہ ملنے سے پڑھے لکھے نوجوان شدید مالی مشکلات کا شکار ہو کر رہ گئے، وزیر اعلیٰ پنجاب ، آئی جی پنجاب سے نوٹس لینے کا مطالبہ۔

تفصیلات کے مطابق ضلع جہلم کے تھانوں میں سائلین کی سہولت کے لئے قائم ہونے والے فرنٹ ڈیسک کے ملازمین کی تقرریاں سال 2016ء میں عمل لائی گئی تھیں ، مگر 3 سال سے زائد کا عرصہ بیت جانے کے باوجود حکومت پنجاب کی جانب سے تاحال فرنٹ ڈیسک کے ملازمین کو مستقل کرنے کے احکامات جاری نہیں ہو سکے۔

ملازمین کا کہنا ہے کہ ہمیں اپنے سکیل کا بھی علم نہیں جبکہ والدین نے ہمیں تعلیم دلوانے کے لئے اپنے گھر کی تمام جمع پونجی بھی خرچ کر ڈالی ، ایڈہاک کی تلوار ہمارے سروں پر لٹکنے کیوجہ سے بیشتر ملازمین اپنے عہدوں سے مستٰفی ہو کر دیگر محکمہ جات میں اپنی ڈیوٹیاں سرانجام دے رہے ہیں ، کمر توڑ مہنگائی اور غیر مستقل ملازمت کیوجہ سے باقی ماندہ ملازمین میں بھی مایوسی بڑھتی جارہی ہے۔

انہوںنے کہا کہ ہم میں سے کئی ملازمین ایم ایس سی کمپیوٹر سائنس ہیں مگر پھربھی ہمارے ساتھ حکومت نے سوتیلی ماں جیسا سلوک اپنا رکھا ہے جوکہ ہماری سمجھ سے بالاتر ہے بعض اوقات تو تنخواہ کی فراہمی بھی 2 یا3 ماہ بعد ہوتی ہے جس کیوجہ سے شدید مالی مشکلات کا سامنا کرنا پڑرہاہے۔

انہوں نے حکومت پنجاب سے مطالبہ کرتے ہوئے کہا کہ ہمیں مستقل کرنے کے احکامات جاری کرتے ہوئے گریڈ 16 میں ترقی دی جائے تاکہ اپنے بزرگ والدین اور چھوٹے بہن بھائیوں کی باعزت طریقے سے کفالت کر سکیں۔

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.