سستے رمضان بازاروں میں کمزور دوکانداروں سمیت پھل و سبزی فروشوں کو اسٹال لگانے پر مجبور کیا جانے لگا

0

کھیوڑہ: سستے رمضان بازاروں میں انتظامیہ کی جانب سے کمزور دوکانداروں سمیت پھل سبزی فروشوں کو اسٹال لگانے پر مجبور کیا جا رہا ہے، سستی معیاری اشیاء تشہیری بینروں تک محدود، ریلف کی نام پر عوام کی عزت نفس کو مجروع کیا جا رہا ہے جبکہ انتظامات کی آڑ میں سرکاری اہلکار دفتروں سے غائب، وزیر اعلی پنجاب سنجیدگی سے نوٹس لیں۔

تفصیلات کے مطابق ماضی کی طرح نئے پاکستان میں بھی اربوں روپے کی سبسڈی سے غریب عوام کو سستی معیاری اشیاء خردونوش کی فراہمی کے لئے سستے رمضان بازار لگائے گئے ہیں جسکے انتظامات پر بھی بھاری خرچ آرہا ہے تاہم قابل افسوس بات یہ ہے کہ ان بازاروں کا خاطر خواں فائدہ عام عوام کو میسر نہیں ہورہا اس سے بہت بہتر ہوتا کہ شفاف طریقہ کار سے اوپن مارکیٹ میں ریٹ مقرر کیے جاتے جن کا مناسب چیک اینڈ بیلنس ہوتا۔

ناقص ترین پلانگ کا اندازہ اس بات سے لگایا جا سکتا ہے کہ اس بار بھی پنڈدادنخان سمیت گردونواح کی تاجران برادری اسسٹنٹ کمشنر کے نارواں سلوک کے خلاف ہڑتال پر ہے انتظامیہ کی جانب سے ایک بار پھرکمزرو دوکانداروں سمیت پھل سبزی فروشوں کو سستے بازار میںا سٹال لگانے پر مجبور کیا جا رہاہے جبکہ دوسری جانب آئے دن حکومتی ریٹ لسٹ کے مطابق چیزیں فروخت نا کرنے پر بھاری جرمانے کیے جا رہے ہیں۔

چھوٹے دوکانداروں کا کہنا ہے کہ ہمیں جب اشیاء ملتی ہی زائدنرخوں پر ہے تو ہم ریٹ لسٹ کے مطابق کسے بیچ سکتے ہیں ،جبکہ سستے بازاروں کا رخ کرنے والی عوام کی اکثریت کا کہنا ہے کہ سستی معیاری اشیاء تشہیری بینروں تک محدود ہیں اشیاء کی انتہائی قلیل مقدار بازاروں میں لائی جاتی ہے جو شاید سرکاری آفیسران کے دوروں کے لیے تصاویر بنوانے کے ضروری ہوتی ہیں۔

ایک کلو چینی کے لیے لائن میں لگنے کے ساتھ شناختی کارڈ کی کاپی نمبر بھی درج کروانا ضروری ہے، دوپہر تک بازار ویران ہوجاتے ہیں اور نرخوں میں بھی تبدیلی ہوجاتی ہے۔

یہاں قابل ذکر بات یہ ہے تحصیل بھر کی سرکاری مشینری ان بازاروں کے انتظامات کی آڑ میں دفتروں سے غائب ہوتی ہے جس کی وجہ سے شہریوں کی مشکلات میں مزید اضافہ ہو جاتا ہے۔

سماجی حلقوں نے وزیر اعلی پنجاب سے اپیل کی ہے کہ سستے بازار سے بہتر ہے اوپن مارکیٹ میں عام ضرورت کی چیزوں کی قیمتیں کنڑول کی جائیں اورسرکاری ملازموں کی دفاتر میں حاضری یقینی بنائی جائے۔

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.