دنیا میں سب مسافر ہیں، ہمیں اپنا محاسبہ کرنا ہو گا اور خود کو واپس لانا ہو گا۔ امیر عبدالقدیر اعوان

0

دینہ: انسان کی تخلیق کا مقصد اور دنیا میں آنے کے بعد کسی بھی بشر کو یہاں کس طرح رہنا ہے اور زندگی کو کیسے بسر کرنا ہے یہ سب کچھ انبیاء ؑ راہنمائی فرماتے ہیں۔ہم سب مسافر ہیں بس ہمیں یہ دیکھنا ہوگا کہ ہمارا سفر کس سمت ہے اگر ہماری منزل اللہ اور اللہ کے حبیب ﷺ ہیں تو الحمد للہ بصورت دیگر ہمیں اپنا محاسبہ کرنا ہو گا اور خود کو واپس لانا ہو گا۔

ان خیالا ت کا اظہا ر شیخ سلسلہ نقشبندیہ اویسیہ و سربراہ تنظیم الاخوان پاکستان امیر عبدالقدیر اعوان نےایک اجتماع سے خطاب کرتے ہوئے کیا ۔ انہوں نے کہا کہ موت ایک طرح سے حیات کے تسلسل کا سبب ہے اور انسان کی حیات کے لیے ہر چیز اپنے آپ کو پیش کر رہی ہے اور انسان کے وجود کے اندر بھی مسلسل موت و حیات کا سلسلہ جاری ہے ۔او ر چھ کھرب سیل سے بنا یہ وجود ہر چھ ماہ میں نئے سیل پیدا کر کے مر جاتا ہے ۔اگر ہم اس سب پر غور کریں تو بہت بڑا سبق ہے۔

انہوں نے مزید کہا کہ قرآن کریم میں حضرت محمد ﷺ کے ساتھ لفظ اُمی آیا جس کے معنی یہ ہیں کہ وہ ہستی جس نے کائنات میں کسی سے ایک لفظ نہ سیکھا ہو کوئی علم حاصل نہیں کیا ہو بلکہ بحر علوم کے خزانے براہ راست اللہ کریم نے آپ کو عطا فرمائے ۔

یاد رہے دارالعرفان منارہ میں 2 دسمبر بروز اتوار 11:00 بجے دن ایک عظیم الشان جلسہ بعثت رحمت عالم ﷺ کے موضوع پر منعقد ہو رہا ہے جس میں ملک کے طول و عرض سے سالکین کی بڑی تعداد کے علاوہ ملکی سیاسی و سماجی شخصیات اور مذہبی قیادت بھی شریک ہوں گی ۔

جلسہ کے انتظامات کے سلسلہ میں ایک اجلاس بھی منعقد ہوا جس کی صدارت امیر عبدالقدیر اعوان مد ظلہ العالی نے کی اور تمام امور کا تفصیلی جائزہ بھی لیا ۔اس اجلاس میں اظہر خورشید صاحب صدر تنظیم الاخوان فیصل آباد،امجد اعوان سیکرٹری نشرواشاعت پاکستان،حکیم عبدالماجد جنرل سیکرٹری تنظیم الاخوان پنجاب ،نیامت ٹوانہ صدر سرگودھا،ڈاکٹر آصف صدر کلر کہاراور دیگر عہدیداران نے شرکت کی ۔

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.