پرائس کنٹرول کمیٹی کی ریٹ لسٹ دیکھاوے اور بھتے کی پرچی کے سوا کچھ نہیں۔ عوامی حلقے

0

پنڈدادنخان: پرائس کنٹرول کمیٹی کی جانب سے جاری ریٹ لسٹ دیکھاوے اور بھتے کی پرچی کے سوا کچھ نہیں، ریٹ لسٹ کے مطابق اشیا ء میسر نہیں جبکہ دوکانداروںکا موقف ہے ہمیں حکومتی نرخ نامے کے تحت کوئی چیز ملے تو ہم اس لسٹ کے مطابق فروخت کریں، حکومتی ملازمین دفاتر تک محدود ،ناقص کارکردگی سے عوام پریشان ،سبزی ،پھل ،گھی ،دالیں ،آٹا ،چینی ،پتی ،سمیت گوشت کے من مانے ریٹوں کے سبب مصنوعی مہنگائی متعلقہ حکومتی اداروں کی نااہلی کا ثبوت ہے۔عوامی سماجی حلقے

تفصیلات کے مطابق شہر بھر میں دوکانداروں اور گاہکوں میں خریدوفروخت کے دوران بحث وتکرار کے واقعات میں اضافہ ہو گیا ہے جس کی بڑی وجہ حکومتی پرائس کنڑول کمیٹی کی ناقص کارکردگی اور حکومتی رٹ کی عدم موجودگی ہے کمیٹی کی جانب سے جاری ریٹ لسٹ میں واضع ہدایات جاری کی گئی ہیں تاہم ان پر عمل درآمد ہوتا نظر نہیں آتا۔

سروے رپورٹ کے مطابق گاہکوں کا کہنا ہے کہ ہمیں شازوناظر کی کوئی چیزا یسی ملتی ہے جو ریٹ لسٹ کے مطابق ہو وگرنا ہر چیز کے قیمت لسٹ پر درج ریٹ سے زائدہی ہوتی ہے جبکہ دوکانداوں کا کہنا ہے کہ جب ہمیں اشیاء زائد نرخوں پر ملے تو کیوں کر ممکن ہے ہم اسے لسٹ پر درج ریٹ پر فروخت کریں ، مضحکہ خیز بات یہ ہے کہ جس ریٹ لسٹ سے خریدار اور دوکانداروں دونوں مطمئن ہی نہیں ہیں اوردونوں کے تحفظات اپنی اپنی جگہ درست ہیں تو اس کی ضروت ہی کیا ہے۔

کمیٹی کی جانب سے جاری احکامات میں یہ بات بھی درج ہے کہ اگرکسی دوکان دار نے نرخ نامہ سامنے آویزاں نہیں کیا اور زائد رقم وصول کی تو اس پر مجاز اتھارٹی جرمانہ کرسکتی ہے، عوام اس غیر موثر ریٹ لسٹ کو دیکھاوا ور دوکان دار بھتہ گردانتے ہیں کیونکہ اس فوٹوسٹیٹ کاغذ کے دس روپے یومیہ وصول کیے جاتے ہیں۔

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.