برمنگھم میں جہلم سے وابستہ افراد کو درپیش مسائل کے حل کیلئے فلاحی تنظیم جہلم فورم مڈلینڈ کا قیام

0

برمنگھم: جہلم سے تعلق رکھنے والے برٹش پاکستانیوں کی فلاحی غیر سیاسی تنظیم جہلم فورم نے برمنگھم میں اپنی نئی تنظیم متعارف کروادی ، اس موقع پر اتفاق رائے سے نعمان سعید کو صدر اور شکیل ڈار کو جنرل سیکرٹری مقرر کر دیا گیا۔تنظیم کا بنیادی مقصد ضلع جہلم میں فلاحی کاموں کے لئے عملی طور پر کام کرنے اور غریب خاندانوں کی کفالت کرنا ہے۔

تفصیلات کے مطابق ضلع جہلم سے تعلق رکھنے والے سینکڑوں پاکستانی برطانیہ کے مختلف شہروں میں آباد ہیں ،مانچسٹر سے تعلق رکھنے والے محمدالیاس گوندل نے ضلع جہلم کے باسیوں کو ایک پلٹ فارم پر جمع کر کے اپنے آبائی علاقے کی ترقی اور فلاح و بہبود کیلئے ایک غیر سیاسی تنظیم ‘‘جہلم فورم’’ کے نام سے بنا رکھی ہے جس میں برطانیہ بھر سے جہلم سے تعلق رکھنے والے افراد شامل ہیں۔

اسی تنظیم نے برطانیہ کے دوسرے بڑے شہر برمنگھم میں اپنا پہلا اجلاس منعقد کیا جس میں اتفاق رائے سے جہلم فورم کی دوسری شاخ برمنگم میں تشکیل دی گئی جس میں اتفاق رائے سے نعمان سعید کو صدر،شکیل ڈار کو جنرل سیکرٹری،شہلا گل کو کوارڈینٹر جبکہ عمران بشیر کو سیکرٹری انفارمیشن مقرر کر دیا گیا۔تمام عہدیداران سے کونسلر افضل خان نے حلف لیا۔

اس دوران چیف آرگنائزر الیاس گوندل نے کہا کہ اس فورم کا مقصد اپنے علاقے کے شہریوں کو ایک پلٹ فارم پر جمع کر کے اپنے آبائی علاقے کی تعمیروترقی کے لئے مل جل کر کام کرنا ہے ،برطانیہ میں جہلم سے تعلق رکھنے والے بے شمار شہری ایم پی اور کونسلرزہونے سمیت بڑے بڑے کارروبار سے منسلک ہیں ہم ان سے ملاقاتیں کرکے ان کی توجہ اپنے آبائی ضلع کی طرف دلانا چاہتے ہیں کہ ہمارے بھائی اور ہمارے آبائی علاقے کے بچوں کو کن کن مشکلات کا سامنا کرنا پڑرہاہے جس کی وجہ سے جہلم فورم کو چیریٹی کمیشن میں رجسٹرڈ کروا کر باقاعدہ طور پر فلاحی کاموں کا آغاز کریں گے۔

اس موقع پر الیاس گوندل، نو منتخب صدر نعمان سعید، کونسلر محمد افضل، شکیل ڈار، محمود کیانی اور دیگر نے صحافیوں سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ اگر فلاحی کاموں میں اپنے آبائی علاقوں کی طرف توجہ دی جائے تو پاکستان کے تمام علاقوں کے باسی برطانیہ میں آباد ہیں جن کی وجہ سے کافی حد تک پسماندہ علاقوں سے غربت کا خاتمہ اور بے سہارا افراد کی مالی معاونت کرکے اللہ کی خوشنودی حاصل کی جاسکتی ہے ۔

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.