جہلم

سرکاری و نجی تعلیمی اداروں کے اردگرد گندگی کے ڈھیر، طالبعلموں اور اساتذہ کو مشکلات کا سامنا

جہلم: شہر میں واقع سرکاری و نجی تعلیمی اداروں کے اردگرد گندگی کے ڈھیر ، سکولوں میں زیر تعلیم طلباء و طالبات اور اساتذہ و ملازمین کو غلاظت کی وجہ سے مشکلات کا سامنا ، میونسپل کمیٹی کے سینٹری ورکرکوڑے کرکٹ کے ڈھیر اٹھانے سے گریزاں ، شہری حلقوں کا ڈپٹی کمشنر جہلم سے نوٹس لینے کا مطالبہ۔

تفصیلات کے مطابق شہر و مضافاتی علاقوں میں واقع سکولوں کے اردگرد گندگی کے ڈھیر لگے ہوئے ہیں ، گندگی کے ڈھیروں کیوجہ سے مسلسل تعفن اور بدبو پھیل رہی ہے ،سکولوں سے ملحقہ آبادیا ں بھی صفائی ستھرائی نہ ہونے کے باعث گندگی کے ڈھیروں میں تبدیل ہو چکی ہیں ، میونسپل کمیٹی کے سینٹری ورکر سول لائن روڈاور بازاروں میں صفائی کرنے کو ترجیح دیتے ہیں جبکہ میونسپل کمیٹی کی 36سے زائد وارڈز صفائی ستھرائی نہ ہونے کی وجہ سے گندگی کے ڈھیروں میں تبدیل ہو چکی ہیں۔

شہریوں نے ڈپٹی کمشنر جہلم چیئرمین میونسپل کمیٹی سے مطالبہ کیا ہے کہ روزانہ کی بنیاد پر شہر کے ملحقہ گلی محلوں اور سرکاری تعلیمی اداروں کے باہر لگے کوڑے کرکٹ کے ڈھیر ختم کروانے کے لئے از خود شہر سمیت تعلیمی اداروں کا دورہ کریں اور کام نہ کرنے والے سینٹری ورکروں کی جگہ فرض شناس ایماندار سینٹری ورکرز کو بھرتی کرکے شہر کی صفائی ستھرائی کروائی جائے تاکہ شہریوں سمیت تعلیمی اداروں میں زیر تعلیم بچے بیماریوں سے محفوظ رہ سکیں۔

متعلقہ مضامین

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button