ڈسٹرکٹ اکاؤنٹس دفتر میں بے ضابطگیاں اور بدعنوانیاں انتہا کو پہنچ گئی

0

جہلم: ڈسٹرکٹ اکاؤنٹس دفتر میں بے ضابطگیاں اور بدعنوانیاں انتہا کو پہنچ گئی، کمیشن کے عوض بوگس اور فرضی بلوں کی ادائیگی جاری ، کمیشن نہ دینے والوں کو دفتر کے چکر لگوائے جاتے ہیں ملازمین کا وزیر اعلیٰ پنجاب عثمان بزدار اور ڈی جی اکاؤنٹس پنجاب سے نوٹس لینے کا مطالبہ۔

ذرائع کے مطابق ڈسٹرکٹ اکاؤنٹس دفتر جہلم میں بے ضابطگیاں ، بدعنوانیاں انتہاکو پہنچ چکی ہیں، جس کے باعث پنجاب گورنمنٹ کے ملازمین کو شدید پریشانی کا سامنا کرنا پڑ رہاہے اکاؤنٹس دفتر میں کمیشن کے عوض بوگس اور فرضی بلوں کی ادائیگیاں دیدہ دلیری کے ساتھ کی جاتی ہیں ، کمیشن نہ دینے والے سائلین کو فٹ بال بنا دیا جاتا ہے۔

ڈسٹرکٹ اکاؤنٹس دفتر کے اہلکاروں نے سائلین کے بلوں پر اعتراضات لگانا مشغلہ بنارکھا ہے جس کی وجہ سے سرکاری اداروں کے متعلقہ ملازمین کو کئی کئی روز تک چکر لگانا پڑتے ہیں۔

متاثرین کا کہنا ہے کہ جب تاخیری بلوں کی ادائیگی کی بابت متعلقہ شعبوں سے رجوع کیا جائے تو ذمہ داران کمپیوٹر کی فنی خرابی کا بہانہ بنا کر ٹرخا دیتے ہیں ،جبکہ اکاؤنٹس دفتر میں کام کرنے والے ذمہ داران اپنی نشستوں پر بیٹھنے کی بجائے دائیں بائیں بیٹھ کر سائلین کو ذلیل و خوارکرکے بھاری معاوضہ کی وصولی کے بعد کام کرتے ہیں۔

متاثرین نے وزیر اعلیٰ پنجاب عثمان بزدار اور ڈی جی اکاؤنٹس پنجاب سے ڈسٹرکٹ اکاؤنٹس دفتر میں تعینات بدعنوان کرپٹ ملازمین و افسران کو تبدیل کرنے کا مطالبہ کیاہے ۔

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.