پنڈدادنخان

اسسٹنٹ کمشنر پنڈدادنخان اور عملہ کی نا اہلی، غلط پالیسیوں کی وجہ سے عوام ذلیل و خوار ہونے لگے

اسسٹنٹ کمشنر پنڈدادنخان اوراْن کے دفتری عملہ کی نا اہلی ، نالائقی اور غیر ذمہ داری اور غلط پالیسیوں کی وجہ سے غریب عوام روزانہ کی بنیاد پر ذلیل و خوار ہونا شروع ہو گئے ۔

اسسٹنٹ کمشنر کے دفتر کے اوقات کار صرف دو گھنٹے ہیں جب کہ ان اوقات میں بھی اسسٹنٹ کمشنر پنڈدادنخان دفتر موجود نہیں رہتے، پاکستان میں یہ واحد آفیسر ہے جو صرف دو گھنٹے ڈیوٹی دیتا ہے اور اسی طرح ان کے دفتر کا میٹرک پاس عملہ جس کی غلطیاں غریب عوام بھگت رہے ہیں کیونکہ ڈومیسائل برانچ کے کلرک نے کوائف کا غلط اندراج اپنا معمول بنا رکھا ہے اور عوام کو دوبارہ فیس کا لالچ دیکر رشوت کا بازار گرم کیے ہوئے ہے۔

اسی طرح اسسٹنٹ کمشنر کے دفتر کا کلرک بھی میٹرک پاس ہے جسے کسی سے بات کرنے کی تمیز تک نہ ہے جو خود کو اسسٹنٹ کمشنر سمجھتا ہے اور عوام کے ساتھ بدتمیزی سے پیش آتا ہے۔اسی طرح اسسٹنٹ کمشنر خود سارا دن دفتر سے غائب رہتے ہیں اور ان ہی کی ناقص پالیسیوں کی وجہ سے غریب عوام کیلئے اشیاء خوردونوش کی شدید قلت ہے اور ناجائز منافع خور دن دگنی رات چگنی ترقی کر رہے ہیں جبکہ تحصیل میونسپل کارپویشن پنڈدادنخان کا عملہ شہر میں چند ایک دوکانیں بند کروا کے ایک گھنٹے کے اندر رشوت لیکر دوبار ہ کھول دی جاتی ہیں۔

اہلیان علاقہ نے کہا ہے کہ جو موصوف اپنے دفتر کا عملہ ٹھیک نہیں کر سکتے تو وہ پوری تحصیل کے ذمہ داری کیسے نبھا سکتے ہیں۔ سیاسی و سماجی حلقوں نے اسسٹنٹ کمشنر پنڈدادنخان کو فی الفور تبدیل کرنے کا مطالبہ کیا ہے کیونکہ ایک سال سے زائد عرصہ یہاں تعینات ہوئے ہیں ان موصوف ہو چکا ہے اور عوام کیلئے ریلیف ایک فیصد بھی نہیں ہے جبکہ فوٹو سیشن اور دیکھاوئے کیلئے کارکردگی کی سینکڑوں مثالیں بنائی گئی ہیں۔

متعلقہ مضامین

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button