جہلم

محکمہ ٹیلیفون میں اندھیر نگری چوپٹ راج ، پاسبان سیکورٹی کمپنی کے مالک نے ملازمین کا خون چوسنا شروع کر دیا

جہلم: محکمہ ٹیلیفون میں اندھیر نگری چوپٹ راج ، پاسبا ن سیکورٹی کمپنی کے مالک نے ملازمین کا خون چوسنا شروع کر دیا ،سیکورٹی گارڈز کمپنی انتظامیہ کے خلاف سراپا احتجاج ، بااثر مالکان نے سیکورٹی گارڈز کی چند ٹکے ماہانہ اجرت مقرر کر رکھی ہے ، ملازمین کا ارباب اختیار سے نوٹس لینے کا مطالبہ۔

تفصیلات کے مطابق جہلم ضلع بھر کی ٹیلیفون ایکسچینجز پر تعینات سیکورٹی گارڈز معاشی بدحالی کا شکار ، بااثر مالک نے محکمہ پی ٹی سی ایل کی انتظامیہ کے ساتھ ملی بھگت کر کے سیکورٹی گارڈز کو حکومت پاکستان کی مقررہ کردہ اجرت کے مطابق تنخواہیں ادا کرنے کی بجائے چند ٹکے ادا کرکے 24 گھنٹے ڈیوٹیاں لی جارہی ہیں۔

قابل ذکر بات یہ ہے کہ بااثر مالکان نے بڑی ایکسچینجز پر تعینات سیکورٹی گارڈز کے لئے ماہانہ 9 ہزار جبکہ مضافاتی علاقوں میں قائم ٹیلی فون ایکسچینجز پر سیکورٹی کے فرائض سر انجام دینے والے ملازمین کو ماہانہ ساڑھے 7 ہزار روپے تنخواہیں ادا کرنی شروع کر رکھی ہیں ،جبکہ محکمہ ٹیلیفون سے فی سیکورٹی گارڈ 15/20 ہزار روپے ماہانہ وصول کرنا شروع کر رکھے ہیں۔

سیکورٹی گارڈز کا اس حوالے سے موقف ہے کہ بااثر مالکان اکثر وبیشتر چند ہزارروپے تھما کر غائب ہوجاتے ہیں ، جبکہ عید الاضحی کے موقع پر ملک بھر کے تمام اداروں نے اپنے ملازمین کو ایڈوانس تنخواہیں ادا کیں مگر پاسبان سیکورٹی کمپنی کے بااثر مالکان نے سیکورٹی گارڈز کو پھوٹی کوڑی دینا بھی گوارہ نہیں کی جس کی وجہ سے ضلع بھر کے ایکسچینجز پر خدمات سر انجام دینے والے سیکورٹی گارڈز بری طرح معاشی بدحالی کا شکار ہیں۔

سیکورٹی گارڈز کا کہنا ہے کہ چیف جسٹس آف پاکستان از خود نوٹس لیکر ہمیں انصاف فراہم کریں تاکہ آج کے مہنگائی کے دور میں باعزت طریقے سے اپنے بیوی بچوں کا پیٹ پال سکیں ۔

موقف جاننے کے لئے ٹیلی فون ایکسچینج جہلم پر تعینات سیکورٹی سپروائزر رزاق احمد سے رابطہ کیا گیا تو انہوں نے کہا کہ میں اس مسئلے کا حل نہیں نکال سکتا پاسبان سیکورٹی ایجنسیز کے مالک میجر جاوید انورکے ساتھ اس حوالے سے بات کرونگا کیونکہ میں خود ان کے ماتحت کام کر رہاہوں۔

متعلقہ مضامین

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button