سوہاوہ

عید الفطر کے قریب آتے ہی درزیوں کے نخرے بڑھ گئے، سلائی میں خود ساختہ اضافہ

سوہاوہ: عید الفطر کے قریب آتے ہی درزیوں کے نخرے بڑھ گئے، نئے کپڑوں کی سلائی میں خود ساختہ اضافہ کر دیا۔

درزیوں نے مردانہ سوٹ کی سلائی 600 روپے ، بچوں کی شلوار قمیض کی سلائی 500 روپے مقرر کر دئیے، جبکہ رش کے باعث درزیوں کی بڑی تعداد نے مزید کپڑے سلائی کے لئے وصول کرنے بھی بند کر دئیے ہیں اور اب صرف اضافی نرخ 8 سو سے 1 ہزار روپے پر نئے کپڑے لئے جارہے ہیں ، جس سے درزیوں کے بھی وارے نیارے ہو گئے ہیں ۔

درزیوں کی دکانیں 24 گھنٹے کھلی رہنے لگی ہیں ، جہاں شفٹوں میں کپڑوں کی سلائی کی جارہی ہے درزیوں نے رش کے باعث اضافی ملازمین بھی دیہاڑیوں پر رکھ لئے ہیں ایک دکان میں 3 سے 6 ورکر سلائی میں مصروف ہیں ، شہر کے بازاروں میں مردانہ سوٹ کا کپڑا 8سو روپے سے 12 سو روپے میں ہے جبکہ سلائی 6سو روپے وصول کی جانے لگی ہے،جبکہ خواتین کے کپڑوں کی سلائی میں بھی غیر معمولی اضافہ کر دیا گیا ہے۔

رش کے باعث درزیوں کی بڑی تعداد نے شہریوں سے مزید کپڑے سلائی کے لئے وصول کرنے بھی بند کر دیئے ہیں ۔

متعلقہ مضامین

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button