جہلم

فرنٹ ڈیسک شہریوں کے اعتماد پر پورا نہ اتر سکے، منشی شہریوں کا مسائل میں الجھانے میں مصروف

جہلم: تھانوں کے فرنٹ ڈیسک شہریوں کے اعتماد پر پورا نہ اتر سکے ، تھانوں کے منشی آج بھی شہریوں کا مسائل میں الجھانے میں مصروف ،شہری دربدر کی ٹھوکریں کھانے پر مجبور،شہریوں کا چیف جسٹس آف پاکستان سے فرنٹ ڈیسک کا ریکارڈ چیک کروانے کا مطالبہ ۔

تفصیلات کے مطابق جہلم ضلع بھر کے تھانوں میں قائم فرنٹ ڈیسک نمائش کے طور پر قائم کر دیئے گئے، فرنٹ ڈیسک کے عملے کے لئے تھانوں کے افسران نے حدود مقرر کررکھی ہے ،فرنٹ ڈیسک کا قیام شہریوں کی سہولت کیلئے عمل میں لایا گیا تاکہ شہری اپنی درخواستیں محرر ان کو دینے کی بجائے فرنٹ ڈیسک پر موجود عملے کے زریعے درج کروائیں گے تاکہ ایف آئی آر، رپٹ وغیرہ شہریوں کو ان کے گھروں کی دہلیز پر میسر ہوگی اور سارا ریکارڈ آن لائن ہوگا جس سے کرپشن ، رشوت کا خاتمہ ہو سکے گا۔

محکمہ پولیس کے افسران نے اپنا رعب برقرار رکھنے کے لئے فرنٹ ڈیسک پر تعینات ہونے والے نوجوانوں کو محررکے اختیارات دینے کی بجائے ان کے لئے حدود مقرر کردیں ہیں۔جس سے اربوں روپے کی لاگت سے قائم ہونے والے فرنٹ ڈیسک محض شوپیس ہی ثابت ہوئے ۔

شہریوں نے چیف جسٹس آف پاکستان سے مطالبہ کیاہے کہ فرنٹ ڈیسک کے عملے کو اختیارات دیئے جائیں تاکہ شہریوں کے مسائل میں اضافے کی بجائے کمی واقع ہو سکے، اور شہری حصول انصاف کے لئے دربدر کی ٹھوکریں کھانے کی بجائے بروقت سستا ا نصاف حاصل کر سکیں ۔

متعلقہ مضامین

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button