جہلماہم خبریں

عید الفطر پر ون ویلنگ کا خونی کھیل نہ رک سکا، سینکڑوں نوجوان ہڈیا ں تڑوا بیٹھے

جہلم: عید الفطر پر ون ویلنگ کا خونی کھیل نہ رک سکا، سینکڑوں نوجوان ہڈیا ں تڑوا بیٹھے، زخمیوں میں اکثریت بچوں کی ہے والدین ہسپتال میں ذلیل وخوار ہوتے رہے، پولیس سرئے سے غائب۔

تفصیلات کے مطابق عید الفطر پر ٹریفک پولیس، موٹر وے پولیس کی سستی نے سینکڑوں نوجوان کو معذور کر دیا، جی ٹی روڈ پر ہزارو ں کی تعداد میں ون ویلنگ کا خونی کھیل کھیلنے والے نوجوان موٹر سائیکل سلپ ہونے اور ایک دوسرے سے ٹکرانے کا باعث شدید زخمی ہو گئے جن کو ریسکیو کی کئی گاڑیاں دن بھر ہسپتال منتقل کر تی رہیں جبکہ ہسپتال کی ایمرجنسی میں انتہائی کم جگہ کے باعث کئی نوجوانوں کو باہر فرش پر لٹادیا گیا جہاں وہ بری برح تڑپتے رہے۔

یہاں یہ بات قابل ذکر ہے کہ زخمی ہونے والے نوجوانوں میں اکثریت 20سے 22سال کے لڑکوں کی ہے جن کے والدین کی غفلت اور لاپروائی کے باعث وہ ون ویلنگ کرتے پھرتے ہیں، بچوں کے زخمی ہونے کی اطلاع پر ہٹ دھرم ماں باپ کی آنکھ کھلی اوروہ ہسپتال میں دیوانہ وار بھاگتے ہوئے علاج کیلئے عملہ کی منتیں کرتے رہے۔

ہر عید پر ون ویلنگ کا خونی کھیل جی ٹی روڈ پر جاری رہتا ہے لیکن ضلع پولیس حکام عید سے چند روزقبل بلند و بانگ دعوے کرکے عید کے دن موقع سے غائب ہو جاتے ہیں اور ون ویلنگ کرنے والے کے خلاف کوئی کاروائی نہیں ہوتی۔

متعلقہ مضامین

ایک تبصرہ

  1. Jnb is ma police ki a kra police ki koi galte nai hai.ma smjta hon k is accident k sub sa zyda kasooreware in ka maa bap ka hai jub in ka beta gar sa motercycle la k neklta hain to in sa poochta nai hain k kdr ja rai ho pher bolta hain k police zimadar hai .

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button