جہلم

محکمہ صحت نے ڈاکٹرز اور عملے کو مریضوں اور لواحقین سے اخلاقیات اپنانے کی آخری وارننگ دیدی

جہلم: محکمہ صحت کی جانب سے سرکاری ہسپتالوں میں انتظامی افسران سمیت تمام ڈاکٹرز کو مریضوں اور لواحقین سے اخلاقیات اپنانے کی آخری وارننگ دے دی گئی ، آئندہ 30 دنوں میں ہسپتالوں میں خوش اخلاقی کی تبدیلی محسوس نہ کی گئی تو ایم ایس صاحبان سے سخت لہجے میں پوچھ گچھ کا سلسلہ شروع کیا جائیگا۔

تفصیلات کے مطابق محکمہ صحت پنجاب نے سرکاری ہسپتالوں میں آئے روز ڈاکٹرز اور مریضوں و لواحقین کے مابین لڑائی جھگڑے کے بڑھتے ہوئے واقعات مریضوں کو طلب کے مطابق علاج فراہم نہ کرنے کی شکایات اور لواحقین کی جانب سے افسران کا ناروارویہ اپنانے کی شکایات پر فوری ایکشن لیا ہے ، اسی تناظر میں سرکاری ہسپتالوں کے انتظامی افسران سمیت دیگر تمام ڈاکٹرز ، ملازمین کو پابند کیا گیاہے کہ وہ مریضوں اور اس کے لواحقین سے بھرپور انداز میں اخلاقیات کا مظاہرہ کریں۔

اس ضمن میں ہسپتالوں کی انتظامیہ اور معالجین کو باور کروایا گیا ہے کہ وہ جس پیشہ سے تعلق رکھتے ہیں اس کا تقاضا ہے کہ غریب ، ان پڑھ اور مجبور مریضوں اور ان کے لواحقین سے خوش اخلاقی سے پیش آئیں تاکہ عوام الناس کو طبی سہولیات کی فراہمی بلا تفریق پہنچائی جا سکیں بصورت دیگر ایمرجنسی انچارج اور ایم ایس صاحبان سے سخت لہجے میں پوچھ گچھ کی جائیگی اور کوئی عذر قابل قبول نہ ہوگا۔

متعلقہ مضامین

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button