جہلم

جہلم میں عرصہ دراز سے گلیوں میں گندہ پانی کھڑا، صفائی کی ابتر صورتحال، شہر کچرے کے ڈھیروں میں تبدیل

جہلم: شہر سمیت مضافاتی علاقوں میں جگہ جگہ گندگی کے ڈھیر ، عرصہ دراز سے گلیوں میں گندہ پانی کھڑا ، صفائی کی ابتر صورتحال ، شہر کچرے کے ڈھیروں میں تبدیل ، شہریوں کا ڈپٹی کمشنر سے نوٹس لینے کا مطالبہ۔
تفصیلات کے مطابق اندرون شہر کے گلی محلوں میں روزانہ کی بنیاد پر صفائی نہ ہونے اور کوڑا کرکٹ تلف نہ کرنے کیوجہ سے شہریوں کا شدید مشکلات کا سامنا کرنا پڑرہاہے ، گندگی کے ڈھیروں اور گلیوں میں کھڑا ہونے والا بدبودار پانی تعفن کا باعث بننے کے ساتھ ساتھ بیماریوں کا موجب بھی بن رہاہے ، میونسپل کارپوریشن کے سینٹری ورکرز گلی محلوں میں سے کوڑا کرکٹ اٹھا کر تلف نہیں کر رہے جس کیوجہ سے گلی محلوں میں کوڑے کرکٹ کے ڈھیر لگ چکے ہیں ۔ علاقہ مکین اور گزرنے والے افرا د تعفن سے مختلف بیماریوں میں مبتلا ہو رہے ہیں ۔
علاقہ مکینوں کا کہنا ہے کہ شہر کوصاف رکھنے کے دعوے صرف فوٹو سیشن تک محدود ہیں ، عملی طور پر میونسپل کارپوریشن کے سینٹری ورکرز اندرون شہر کے گلی محلوں کی صفائی ستھرائی کرنے کی بجائے سرکاری افسران اور سیاست دانوں کے ڈیروں پر حاضریاں دیکر ماہانہ لاکھوں کروڑوں روپے سرکاری خزانے سے وصول کر رہے ہیں جو کہ اہلیان جہلم کے ساتھ سخت زیادتی ہے ۔
شہریوں نے ڈپٹی کمشنر سے مطالبہ کیا ہے کہ شہر کے گلی محلوں کی صفائی ستھرائی ہنگامی بنیادوں پر کروائی جائے تاکہ شہری بیماریوں سے محفوظ رہ سکیں۔

متعلقہ مضامین

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button