جہلم

تاجر کسی بھی ملک کی معیشت میں ریڑھ کی ہڈی کی حیثیت رکھتے ہیں۔ ڈی پی او عبدالغفار قیصرانی

جہلم: تاجر کسی بھی ملک کی معیشت میں ریڑھ کی ہڈی کی حیثیت رکھتے ہیں ،کیونکہ تاجروں نے بے آواز مظلوموں کو آواز دے کر ان کے مسائل حل کروا کر انہیں انصاف کی فراہمی کو یقینی بنانا ہے۔

ان خیالات کااظہار ڈسٹرکٹ پولیس آفیسر عبدالغفارقیصرانی نے ہفتہ کے روز مرکزی انجمن تاجران کے ایک وفد سے گفتگو کرتے ہوئے کیا۔ مرکزی انجمن تاجران کے عہدیداروں الحاج ظہور عالم بٹ،چوہدری سعید احمد،چوہدری سعید اللہ مدبر،خواجہ ناصر ڈار،چوہدری محمد شعیب،ذوالفقار علی کاشف،فخر سیٹھی،شیخ محمد احسان کے علاوہ دیگر ایسوسی ایشنز کے صدور موجود تھے۔

تاجروں نے ٹریفک کے معمول کو ٹھیک کرنے کیلئے ڈی پی او سے ایک بہتر حکمت عملی بنانے کی اپیل کی۔جس پر ڈی پی او نے کہا کہ ضلع میں جتنے کرائم ہم روک سکتے تھے اور جرائم پیشہ افراد گرفتار کر سکتے تھے حتی المکان کوشش کی کہ اس ضلع کو جرائم سے پاک کر کے امن وامان عوام کو دیا جائے لیکن اگر مرکزی انجمن تاجران کے صدراور تاجران جہلم شہر کے تمام بازاروں کے اندرون اور باہر کیمرے لگوانے میں ہمارے مشن کا حصہ بنیں تو یقینا جرائم پیشہ افراد کے لیے تمام راستے بند ہو سکتے ہیں جس پر محمد تاجروں نے انہیں یقین دلایا کہ آپ جوبھی تاجروں کے مفاد میں اقدام کریںگے ہم آپ کے ساتھ ہوںگے ۔

ڈی پی او نے کہا کہ چند روز میں ڈپٹی کمشنر کیپٹن (ر)عبدالستار عیسانی ،ڈی ایس پی ٹریفک راجہ نثار احمد ،چیئرمین میونسپل کمیٹی حاجی مرزا راشد ندیم جرال اور ٹریفک سٹاف کے ساتھ ساتھ تاجروں اور موٹرسائیکل رکشہ جات ایسوسی ایشن کے عہدیداروں کے ساتھ ایک مشترکہ اجلاس کر کے تمام موٹرسائیکل رکشہ جات کو ان کے اڈوں میں پابند کرنے کی حکمت عملی بنا کر فیصلہ کیا جائیگا ۔انہوں نے کہا کہ قانونی تقاضے پورے کرنے کیلئے ایک تو تاجر کم عمر بچوں کو موٹرسائیکل اور کاریں نہ چلانے دیں جبکہ جن بچوں کی عمر لائسنس بنانے کے قابل ہے ان کے لائسنس بنائے جائیں۔

انہوں نے کہا کہ سوہاوہ میں پولیس خدمت مرکز بنا کر سوہاوہ کے لوگوں کو اگلے ہفتے ڈرائیونگ لائسنس جاری کرنے کا عمل وہیں شروع کر دیا جائیگا جس کے ضمن میں ڈی ایس پی ٹریفک راجہ نثار احمد کو ہدایت کر دی گئی ہے ۔کیونکہ انسپکٹر جنرل پولیس پنجاب کیپٹن (ر)عارف نواز خان عوام کو تمام سہولیات پولیس خدمت مراکز سے دے کر عوام کو ریلیف دے رہے ہیں جس پر پورا عمل کیا جائیگا۔

متعلقہ مضامین

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button