جب دل میں نور ایمان آتا ہے تو پھر قلب بندہ مومن کو صحیح راہ دکھاتا ہے۔ امیر عبدالقدیر اعوان

0

دینہ: بندہ مومن کسی فرد واحد یا حکومت وقت سے اپنی ذاتی ضد اور انا کی وجہ سے تعلقات نہیں رکھتا بلکہ اسکی دوستی اور دشمنی صرف اللہ کریم کے بتائے ہوئے اصولوں کے مطابق ہوتی ہے ،کیونکہ جب کوئی بھی فیصلہ ضد اور انا کے تحت کیا جاتا ہے تو اس میں انصاف بلکل بھی نہیں ہو سکتا۔

ان خیالات کا اظہارامیر عبدالقدیر اعوان شیخ سلسلہ نقشبندیہ اویسیہ و سربراہ تنظیم الاخوان پاکستان نے اجتماع کے موقع پر خطاب کرتے ہوئے کیا۔ انہوں نے کہا کہ قلب کی حیات نورِ ایمان سے مشروط ہے ،جب دل میں نو ر ایمان آتا ہے تو پھر قلب بندہ مومن کو صحیح راہ دکھاتا ہے۔

امیر عبدالقدیر اعوان نے کہا کہ ضروری ہے کہ ہم ہر وقت اپنا جائزہ لیتے رہیں اور اپنے قلب کو حیات بخشنے کے لیے اپنے ایمان کو مضبوط کریں اور جو حدود دین اسلام نے مقرر فرمائیں ہیں ان کے اند ررہ کر زندگی گزارنی ہے اور معاشرے کی اس روش سے کنارہ کشی اختیارکرنا ہو گی جو کہ دین اسلام سے باہرہو گی۔

انہوں نے کشمیری مسلمانوں پر بھارتی دہشت گردی کی مذمت کی اور ان کے لیے دعا بھی کی کہ اللہ کریم انہیں صبر دے او ر ہمارے حکمرانوں کو غیرت ایمانی عطا فرمائے ۔

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.