بھارتی سرکار سکھوں کے پاکستان کے ساتھ تعلقات کا تنگ نظری سے دیکھ رہی ہے، عبداللہ گل

0

کھیوڑہ: محمد عبداللہ گل نے کہا کہ بھارتی سرکار سکھوں کے پاکستان کے ساتھ تعلقات کا تنگ نظری سے دیکھ رہی ہے،پاکستانی وزیرِ خارجہ نے بھارتی وزیرِ خارجہ کو افتتاحی تقریب میں شامل ہونی کی دعوت دی لیکن انہوں نے معذرت کر لی ، کرتار پور بارڈر کھلنے سے دنیا بھر کے سکھوں میں خوشی کی لہر دورڑ گئی۔

ان خیالات کا اظہار چیئرمین تحریکِ جوانانِ پاکستان نے کرتار پوربارڈر کھلنے پر تبصرہ کرتے ہوئے کیا۔ انہوں نے کہا کہ کرتار پور بارڈر کھلنے سے دنیا بھر کے سکھوں میں خوشی کی لہر دوڑ گئی، پاکستانی وزیرِ خارجہ نے بھارتی وزیرِ خارجہ کو افتتاحی تقریب میں شامل ہونی کی دعوت دی لیکن انہوں نے معذرت کر لی ۔

انہوں نے کہا کہ دنیا جانتی ہے پاکستانی قانون سکھوں سمیت تمام اقلیتی برادریوں کو مکمل مذہبی آزادی دیتا ہے، کرتار پور بہت بڑا سکھوں کا مذہبی مقام ہے اور اسے مہاراجہ پٹیالہ بھوپیندر سنگھ نے تعمیر کرایا تھا ۔

عبداللہ گل نے کہا کہ یہاں سکھ مذہب کے بانی بابا گرونانک نے اپنی زندگی کے آخری بیس سال گزارے اور اسی جگہ 1539 میں ان کی وفات ہوئی۔

انہوں نے کہا کہ حکومتِ پاکستان نے سکھوں کے اس مذہبی مقام کو برقرار رکھنے کے لئے کروڑوں روپے خرچ کئے ہیں ، بھارتی سرکار نے یہ بارڈر کھولنے پر اتنا زیادہ خوشی کا اظہار نہیں کیا، بھارتی سرکار سکھوں کے پاکستان کے ساتھ تعلقات کا تنگ نظری سے دیکھ رہی ہے۔

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.