جہلم

پیمرا کی عدم توجہی، سیٹلائٹ چینلز پر فحش اشتہارات کی بھرمار

جہلم: پیمرا کی عدم توجہی ، سیٹلائٹ چینلز پر فحش اشتہارات کی بھرمار، نوجوان نسل سمیت معصوم بچے بے راہ روی کا شکار ہونے لگے ، عوامی ، سماجی، مذہبی حلقوںنے عریانی پھیلانے کے مرتکب فحش چینلز کو بند کرنے کا مطالبہ کر دیا۔
تفصیلات کے مطابق ٹی وی چینلز جن کو معاشرے میں اب بے حد پزیرائی مل رہی ہے اور کوئی گھر ایسا نہیں جہاں ٹیلیویژن نہ دیکھا جاتا ہو ، کئی کئی گھروں میں 3/4 ٹیلیویژن موجود ہیںجس سے گھر کے افرادآگاہی سے مستفیدہورہے ہیں زیادہ تر بچوں کی تعداد کارٹونز اور انٹرٹینمنٹ کے پروگرام دیکھنے کو ترجیح دیتے ہیں۔
بیشتر ٹی وی چینلز دوران ِ پروگرام کمرشل اشتہارات میں انتہائی غیر اخلاقی فحش اور گھٹیا اشتہارات نشر کرتے ہیں کہ بچے والدین اور والدین بچوں کے سامنے شرمندہ ہوجاتے ہیں لگتا ہے کہ یہ اشتہار ات کسی اور ملک کے لئے فلمائے گئے ہیں مگر اس کو تجرباتی طور پروطن عزیز میں نشر کرکے شہریوں کے برداشت کے پیمانے کو چیک کیا جارہاہے تاکہ اگر میدان صاف ملے تو یورپی طرز کے طور پر بے حیائی کے اشتہار ات نشر کرکے مذہبی اقدار کا مذاق اڑایا جا سکے ۔
ان ٹی وی چینلز پر دن اور رات کے اوقات میں انتہائی گھٹیا غیر اخلاقی اشتہار نشر کے بے حیائی پھیلانے کے مرتکب افراد سے چند کوڑیوں کے عوض وطن عزیز کی نوجوان نسل کو بے راہ روی کا شکار بنایا جا رہا ہے۔
قابل ذکر بات یہ ہے کہ ایشیا سیٹ 7 سمیت پاک سیٹ سیٹلائیٹ جو پاکستان کی مخصوص نشریاتی سیٹلائٹ ہے جس پر کنٹرول بھی پمپرا اور حکومت پاکستان کاہے ان سیٹلا ئٹس پر اس قسم کے فحش غیر اخلاقی اشتہارات چلائے جانا سمجھ سے بالا تر ہے ، جو کہ پیمرا کے لئے بھی سوالیہ نشان ہے۔
شہر کی عوامی ، سماجی ، رفاعی ، فلاحی ، مذہبی سمیت شہری تنظیموں کے عمائدین نے کہا کہ ہمارے ایمان اور صبر کا امتحان نہ لیا جائے حکومت فوری نوٹس لیتے ہیں فحاشی ، عریانی پھیلانے کے مرتکب ٹی وی چینلز کو فی الفور نشریات بند کرنے کا پابند بنائے تاکہ نوجوان نسل کو بے حیائی ، عریانی سے روکا جا سکے ۔

متعلقہ مضامین

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button