جہلم

جہلم میں مضر صحت اور ملاوٹ شدہ دودھ اور دہی کی فروخت، شہری مختلف بیماریوں میں مبتلا ہونے لگے

جہلم: ضلع بھر میں مضر صحت اور ملاوٹ شدہ دودھ ، دہی کی فروخت کا سلسلہ جاری ، شہری مختلف بیماریوں میں مبتلا ہونے لگے ، ڈی جی پنجاب فوڈ اتھارٹی سے نوٹس لینے کا مطالبہ۔
تفصیلات کے مطابق ضلع بھر میں مضر صحت اور ملاوٹ شدہ دودھ ، دہی کی فروخت کا سلسلہ عروج پر پہنچ گیا ،دودھ فروش کیمیکل اور کھاد سمیت دیگر ناقص و غیر معیاری اشیاء کا استعمال کرکے مصنوعی دودھ تیار کرتے ہیں پھر باآسانی شہر کی مختلف د کانوں ، ہوٹلوں اور گھروں میں فروخت کردیتے ہیں ،مذکورہ مضر صحت ا ور ناقص دودھ کے استعمال سے شہریوں کی بڑی تعداد مختلف بیماریوں میں مبتلا ہورہی ہے۔
شہریوں نے شدید احتجاج کرتے ہوئے صحافیوں کو بتایا کہ فوڈ اتھارٹی کے ذمہ داران نے ناقص و غیر معیاری مضر صحت دودھ سپلائی کرنے والے گوالوں کو کبھی چیک کرنے کی ضرورت محسوس نہیں کی جس کیوجہ سے دودھ فروش اور گوالے دیدہ دلیری کے ساتھ جہلم اور اندرون شہر سمیت مضافاتی علاقوں میں مضر صحت دودھ فروخت کرکے شہریوں کو بیماریوں میں مبتلا کررہے ہیں۔
شہریوں نے ڈی جی پنجاب فوڈ اتھارٹی، کمشنر راولپنڈی، ڈپٹی کمشنر جہلم سے مضر صحت دودھ فروخت کرنے والے دکانداروں اور گوالوں کے خلاف کارروائی کرنے کا مطالبہ کیا۔

متعلقہ مضامین

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button